121

ُپاکپتن: کشمیری خواتین کی آبرو ریزی، نوجوانوں کی بلا وجہ گرفتاریوں پر اقوام عالم کی خاموشی سمجھ سے بالاتر ہے. شوکت محمود چشتی

پاکپتن (حمزہ چشتی سے) خواتین کی آبرو ریزی کشمیری نوجوانوں کی بلا وجہ گرفتاریاں پر اقوام عالم کی خاموشی سمجھ سے بالاتر ہے ان خیالات کا اظہار پیر شوکت محمود چشتی ہیڈ ماسٹر گورنمنٹ ایلیمنٹری سکول امرسنگھ، پاکپتن کے اساتذہ، طلباء اور سماجی تنظیموں کے ساتھ یوم سیاہ کے موقع پر نکالی گئی مشترکہ ریلی سے خطاب کرتے ہوئے کیا

حکیم لطف اللہ سیکرٹری جنرل پاکستان سوشل ایسوسی ایشن نے کہ کہا اقوام متحدہ، او آئی سی، انسانی حقوق کی عالمی تنظیمیں کشمیر میں 74 سالوں سے جاری ظلم و بربریت کا نوٹس لیں۔ آج دنیا جہاں جانوروں کے حقوق کے لئے سڑکوں پر نکل آتی ہے تو پھر کشمیریوں کے ساتھ ہونے والے مظالم پر خاموش تماشائی کیوں بنی ہوئی ہے. انہوں نے مزید کہا کہ 2سال میں اب تک 1لاکھ سے زائد کشمیری شہید کئے جاچکے ہیں۔ روزانہ کی بنیاد پر عورتوں کی عصمت دری ہو رہی ہے دودھ کوترستے، بھوک سے بلکتے بچے معذور اور یتیم ہورہے ہیں۔

صدر انجمن فلاح مریضاں وسیکرٹری جنرل انٹرنیشنل چشتی اتحاد ڈاکٹر شاہد مرتضی چشتی نے کہا کہ مذہبی پابندیاں، سوشل میڈیا کی پابندیوں کا شکار مقبوضہ کشمیر بھارتی ریاستی جبر اور مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت تبدیل کرنے کے خلاف یوم سیاہ کے موقع پر عالمی طاقتوں اور انسانی حقوق کی علمبردار تنظیموں کے منہ پر زوردار طمانچہ ہے۔

پیر غلام رسول پاکستانی نے کہا کہ آج یہ بچے سراہا احتجاج ہیں اور مطالبہ کرتے ہیں کہ اقوام متحدہ میں موجود قرارداد پر فی الفور عمل کرواتے ہوئے کشمیری لوگوں کو حق خود ارادیت دی جائے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں