47

پاکپتن: ٹورازم کو فروغ دے کر غربت کا خاتمہ کیا جاسکتا ہے. حکیم لطف اللہ

پاکپتن (نصراللہ جوئیہ سے) ٹورازم کو فروغ دے کر غربت کا خاتمہ کیا جاسکتا ہے ہمیں اپنے سیاحتی مقامات کو ترقی دینا ہوگی ان خیالات کا اظہار حکیم لطف اللہ سیکرٹری جنرل پاکستان سوشل ایسوسی ایشن و جنرل سیکرٹری ڈسٹرکٹ انٹی ٹی بی ایسوسی ایشن نے کیا.

انہوں نے کہا کہ کرپشن نے ہمارے معاشرے کو زوال پذیر کر دیا ہے ہمارا ٹیلنٹ ضائع ہو رہا ہے پی ایچ ڈی ہولڈرز بے روزگار ہیں ہمیں اپنے تاریخی مقامات اور ورثہ کی حفاظت کرنا ہے اور آنیوالی نسلوں کو ورثہ سے روشناس کرانا ہے ہم نے سیاحت کے شعبہ میں ترقی کی طرف توجہ نہیں دی ٹورزم کو فروغ دے کر نوجوانوں کیلئے روزگار کے مواقع پیدا کرنے ہونگے.

پاک فوج کی لازوال قربانیوں کی وجہ سے اب ہم دہشتگردی کی جنگ سے نکل کر امن کی طرف لوٹ رہے ہیں سیاحوں کیلئے اب پاکستان پرسکون جگہ ہے پاکستان دنیا کا واحد ملک ہے جہاں دنیا بھر کے تمام موسم موجود ہیں دریا، صحرامیدان، آبشاریں جھرنے دنیا کے بڑے تمام پہاڑ زیر زمین میٹھا پانی دنیا کا بہترین نہری نظام دریاسمندر،ریلوے سی پیک منصوبہ اور دنیا کی 80فیصد تجارت ہماری سمندری حدود سے ہوتی ہے پاکستان قدرتی وسائل معدنیات سے مالا مال ہے پاکستان قدیم تہذیبی و ثقافتی وسائل سے مالا مال لاہور، پشاور، شمالی علاقہ جات، ہرپہ، موہنجوداڑو دیگر بے شمار قدرتی اور مذہبی مقامات کا گہوارہ ہے بے شمار مقامات کو سیاحتی بنانے پر کام کی ضرورت ہے ہمارے قریبی اسلامی ملک ترکی نے سیاحت میں ترقی کی اور سالانہ صرف سیاحت سے 40 ارب ڈالر کی آمدنی لے رہا ہے. وزیراعظم اسلامی جمہوریہ پاکستان عمران خان کے ویژن کے مطابق قومی ٹورزم حکمت عملی 2030 کے تحت قوم تاریخی اور قومی ورثہ پر کام شروع ہو چکا ہے.

قائداعظم کی سماجی تنظیم پاکستان سوشل ایسوسی ایشن 21 /22/ 23 مارچ کو سید عمار حسین جعفری صدر پی ایس اے کی قیادت میں مالم جبہ، مینگورہ سوات انٹرنیشنل ٹورزم کانفرنس کرانے جا رہی ہے جس کیلئے کمشنر مالا کنڈ ظہیرالسلام اور حکیم ملک صاحبزادہ خان اپنا بھرپور کردار ادا کررہے ہیں کانفرنس کی تمام ترتیاریاں مکمل کر لی گئی ہیں پانچ سو کے قریب مندوبین اندرون اور بیرون ملک سے شرکت کرینگے.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں