99

پاکپتن: وزیر اعظم عمران خان کے دورہ پاکپتن کے موقع پر کوریج کے دوران صحافیوں کے خلاف غنڈہ گردی اور موبائل چھیننے کے ذمہ داران کے خلاف مقدمہ درج کرکے فی الفور گرفتارکیاجائے. صحافی بادری کا مطالبہ

پاکپتن (خصوصی رپورٹ) وزیر اعظم عمران خان کے دورہ پاکپتن کے موقع پر کوریج کے دوران صحافیوں کے خلاف غنڈہ گردی اور موبائل چھیننے کے ذمہ داران کے خلاف مقدمہ درج کرکے فی الفور گرفتارکیاجائے. پریس کلب کے ہنگامی، مذمتی اجلاس میں مطالبہ.

تفصیلات کے مطابق پریس کلب پاکپتن کا ہنگامی مذمتی اجلاس زیر صدارت صدر پریس کلب پاکپتن وقار فرید جگنو منعقد ہوا۔اجلاس میں مطالبہ کیا گیا کہ انتظامیہ وزیر اعظم پاکستان عمران خان کے دورہ پاکپتن کے موقع پر پولیس اہلکاروں کی طرف سے صحافیوں کے خلاف کی گئی غنڈہ گردی اور دوران کوریج چھینے گئے موبائل کا مقدمہ 8 دسمبر بروز منگل تک درج کرکے گرفتار ملزم کو منظر عام پر لایا جائے.

اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ اگر ایسا نا کیا گیا تو منگل دوپہر 12 بجے ڈی ایس پی ہیڈ کوارٹر نوید سرور، ڈی ایس پی صدر عبدالرحمن عاصم اور ایس ایچ او سٹی محمد اشرف بھٹی کے خلاف پریس کلب پاکپتن سے نگینہ چوک تک احتجاجی ریلی نکالی جائے گی۔

اجلاس میں حکیم لطف اللہ چیف الیکشن کمیشن وڈاکٹر شاہد مرتضیٰ چشتی ممبر الیکشن کمیشن پریس کلب پاکپتن، پیر امداد حسین چیئرمین پریس کلب پاکپتن، وقار فرید جگنو صدر پریس کلب پاکپتن، سمیع اللہ جنرل سیکرٹری پریس کلب پاکپتن، غلام فرید الدین چشتی چیئرمین الیکٹرانک میڈیا پاکپتن، پیر سعید احمد چشتی صدر الیکٹرانک میڈیا پاکپتن، کاشف بٹ سینئر نائب صدر الیکٹرانک میڈیا پاکپتن، رانا مہران اکبر اکبراپوزیشن لیڈر، سید وارث علی شاہ ڈپٹی اپوزیشن لیڈر پریس کلب پاکپتن، افتخار بھٹی ایڈیشنل جنرل سیکرٹری الیکٹرانک میڈیا پاکپتن، پیر طارق سجاد چشتی سیکرٹری فنانس پریس کلب، سینئر صحافی ملک بشیر احمد، طاہر فرید جوائنٹ سیکرٹری پریس کلب پاکپتن، پیر توقیر رمضان نائب صدر الیکٹرانک میڈیا پاکپتن، حیدر علی شہزاد سیکرٹری اطلاعات، ملک علی حسنین، عاطف خان، سکندر نقوی، محمد بخش شاہد، ڈاکٹر ممتاز، علی احمد، قمرعباس، محمد اکرم ودیگر نے شرکت کی.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں