22

ایسی ہوتی ہے ریاست مدینہ؟ … (راؤ کامران علی، ایم ڈی)

تحریر: راؤ کامران علی، ایم ڈی

سنی لیون سے کسی نے پوچھا کہ آپ کپڑے پہنا کریں؛ معاشرے میں بےحیائی پھیل رہی ہے؛ اس نے بے اعتنائی سے جواب دیا، “ کیا بلی بھی کپڑے پہن لے؟ لوگ قبروں سے نکال کر ریپ کررہے ہیں”؟

نشے میں دھت ڈرائیو کرتے، بگو ڈرائیور کو پولیس والے نے گرفتار کیا؛ اس نے امیتابھ بچن اسٹائل میں فرمایا؛ “جو شراب نہیں پی کر چلاتے ہیں کیا انکے ایکسیڈنٹ نہیں ہوتے”؟

خان صاحب ٹرین کی پٹری پر لیٹے تھے؛ لوگوں نے کہا خان صاحب فوت ہوجائیں گے؛ فرمایا “کیا ٹرینوں کے حادثے میں ویسے بھی لوگ نہیں مرتے”؟

بشیر میاں پورے گھر کے دروازے کھلے چھوڑ کر؛ زیور کپڑا چارپائی کے ساتھ رکھ کر سونے لگے؛ اہل محلہ نے کہا، میاں صاحب دروازے تو بند کرلیا کریں، جواب آیا؛ “بند دروازے والے گھروں میں کیا چوریاں ڈکیتیاں نہیں ہوتیں”؟

ماڈل ماہ پارہ، ہوشربا نائنٹی پہن کر آدھی رات کو نائٹ واک کرنے لگی؛ چوکیدار نے ٹوکا؛ ارشاد فرمایا “دفع ہوجاؤ عورت ذات کے دشمن، مائیسوجینسٹک مینmisogynistic man; برقعے والی کو بھی کوئی نہیں چھوڑتا”!!!

اور کچھ ہفتوں کے بعد لوگوں نے دیکھا کہ سنی لیون ، بگو ڈرائیور، خان صاحب، بشیر میاں، ماڈل ماہ پارہ ہاتھوں میں بینر اور کتبے اٹھائے سڑکوں پر احتجاج کررہے تھے کہ حکومت امن و عامہ قائم کرنے میں ناکام رہی ہے؛ عزتیں لٹ رہی ہیں، چوری ڈاکے بڑھ رہے ہیں، حادثات میں اضافہ ہورہا ہے! اس کا ذمہ دار وزیراعظم ہے! ایسی ہوتی ہے ریاست مدینہ؟

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں