74

ُپاکپتن: عمل کی ہمیشہ زندہ رہنے والی تاریخ کا دوسرا نام شہید حکیم محمد سعید تھا۔ بریلینٹ فورم میں مقررین کا خطاب.

پاکپتن (رانا صفدر سے) گذشتہ روز بریلینٹ فورم میں حکیم محمد سعید شہید کی سالگرہ کی تقریب کا انعقاد پاکستان سوشل ایسوسی ایشن، انجمن فلاح مریضاں، ڈسٹرکٹ اینٹی ٹی بی ایسوسی ایشن اور بریلینٹ پاکستان کے زیر اہتمام کیا گیا.

اس خبر کی ویڈیو رپورٹ دیکھنے کے لیے یہاں کلک کریں

تقریب سے خطاب کرتے ہوئے مقررین نے حکیم صاحب کو ذبر دست خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ شہید حکیم محمد سعید پاکستان کے ذرے ذرے سے محبت کرنے والے اور ایماندا انسان تھے، وہ انسانیت کی خدمت کے لئے ہی پیدا ہوئے تھے لفظ ہمدرد ان کی زندگی اور انکے بنائے ہوئے اداروں کی پہچان بن گیا. حکیم صاحب کا نعرہ تھا کہ پاکستان سے محبت کرو، پاکستان کی تعمیر کرو.اخلاق محبت خلوص علم ایثار انسان دوستی، فروغ طب و حکمت وقار اطباء تعمیر وطن اور سعی و عمل کی ہمیشہ زندہ رہنے والی تاریخ کا دوسرا نام شہید حکیم محمد سعید تھا۔

مقررین میں ڈپٹی ڈائریکٹر سوشل ویلفئیر افضل بشیر مرزا، حکیم لطف اللہ مرکزی سیکرٹری جنرل پاکستان سوشل ایسوسی ایشن، چیف ایڈیٹر بریلینٹ و صدر انجمن فلاح مریضان ڈاکٹر شاہد مرتضیٰ چشتی، پرنسپل پاکستان انسٹیٹیوٹ آف لاء کالج ملک فاروق احمد ایڈووکیٹ، صدر پریس کلب وقار فرید جگنو، صدر پاکستان طبّی کانفرنس حکیم عبدالمجید شامی، صدر پرائیویٹ سکول ایسوسی ایشن غلام حیدر، اویس عابد ایڈووکیٹ، صدر ہومیوپیتھک ایسوسی ایشن میاں غلام مرتضیٰ، پرنسپل پاکپتن پیرامیڈیکل کالج ڈاکٹر محمود ریاض جوئیہ، رانا اورنگزیب، شاعر احمد سعید اسجد، پروفیسر نوید عاجز، ممتاز ماہر تعلیم و شاعر موج دین فریدی، خالد عباسی، الحاج حکیم نذیر قادری، راؤ خلیل اللّه، رانا سعد نورانی شامل تھے.

تقریب میں حکیم صاحب کے لیے بلندی درجات و ایصال ثواب کے لیے دعا کی گئی. تقریب کے آخر میں بچوں نے حکیم صاحب کی سالگرہ کا کیک کاٹا.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں