194

ساہیوال: ساہیوال میڈیکل کالج کا پہلا کونووکیشن، ڈاکڑوں کو چاہئے کہ وہ خدمت خلق کے جذبے سے دکھی انسانیت کی مدد کریں، گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور

ساہیوال (خصوصی رپورٹ) گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور نے کہا ہے کہ موجودہ حکومت عام آدمی کو صحت کی بہتر بنیادی سہولیات کی دستیابی اور معاشرے میں صحت سے متعلق شعور اجاگر کرنے پر پوری توجہ دے رہی ہے، تعلیم اور صحت کے بغیر کوئی معاشرہ ترقی نہیں کر سکتا جس کے لئے حکومت کے ساتھ ساتھ مخیر حضرات کو بھی اپنا کردار ادا کرنا چاہیے- ڈاکٹر ی ایک ایسا پیشہ ہے جس میں دنیا اور آخرت دونوں میں کامیابی ہے، ڈاکڑوں کو چاہئے کہ وہ خدمت خلق کے جذبے سے دکھی انسانیت کی مدد کریں- وہ یہاں ساہیوال میڈیکل کالج کے پہلے کانووکیشن سے خطاب کر رہے تھے.

جس میں کالج سے ایم بی بی ایس کرنے والے 4 سیشنز 2010-15سے2013-18کے طلبا و طالبات کو ڈگریاں اور میڈلز تقسیم کئے گئے- کانووکیشن میں یونیورسٹی آ ف ہیلتھ سائنسز کے وائس چانسلر ڈاکٹر جاوید اکرم، کنگ ایڈورڈ میڈیکل یونیورسٹی کے وائس چانسلر اور کالج آف فزیشن اینڈ سرجنز کے سینئر نائب صدر پروفیسر ڈاکٹر خالد مسعود گوندل (تمغہ امتیاز)، ساہیوال میڈیکل کالج کے پرنسپل پروفیسر ڈاکٹر زاہد کمال صدیقی، کمشنر ساہیوال ڈویڑن محمد احسن وحید، کالج کے سابق پرنسپلز پروفیسر ڈاکٹر ضمیر احمد اورڈاکٹر ارشد قریشی، ڈائریکٹر ہیلتھ ڈاکٹر صادق سلیم، فکیلیٹی ممبران ڈاکٹر زاہد ستار، ڈاکٹر نثار احمد، ڈاکٹر خلیل احمد، ڈاکٹر اختر محبوب اور ڈاکٹر ہارون گیلانی کے علاوہ اساتذہ، والدین، طلبا و طالبات اور معززین شہر نے بڑی تعداد میں شرکت کی-

گورنر نے کہا کہ یونیورسٹیوں میں تعلیمی معیار کو بہتر کرنے اور انہیں ریسر چ کے بہترین ادارے بنانے کے لئے ضروری ہے کہ میرٹ پر تقرریاں کی جائیں اور وزیراعظم عمران خان کے وژن کے مطابق اب تک پنجاب کی 20 یونیورسٹیوں میں خالصتا میرٹ پر وائس چانسلرز تعینات کئے گئے ہیں اور وہ وقت دور نہیں جب ہمارے اعلی تعلیمی ادارے بین الاقوامی معیار کے سکالرز پیدا کریں گے- گورنر چوہدری محمد سرور نے ڈگریاں حاصل کرنے والے طلبا وطالبات کو مبارکباد دی اور کہا کہ زندگی میں لوگوں کی خدمت کو اپنا شعار بنائیں اور دنیا اور آخرت میں کامیابی حاصل کریں- انہوں نے کہا کہ پاکستان میں صحت عامہ کے مسائل کی سب سے بڑی وجہ عوام کی صحت کے بارے میں شعور سے عدم آگہی ہے جسے دور کرنے کے لئے غیر سرکاری تنظیموں اوربا شعور شہریوں کو حکومت کا ہاتھ بٹانا چاہیے- گورنر پنجاب نے ساہیوال میڈیکل کالج کی دیگر ضروریات پوری کرنے کا بھی یقین دلایا اور پرنسپل کو ہدایت کی کہ وہ جلد نیا پی سی ون تیار کر کے بجھوائیں تا کہ صوبائی حکومت سے فنڈز حاصل کئے جا سکیں- انہو ں نے کہا کہ سرور فاونڈیشن صحت عامہ کے شعبے میں گراں قدر خدمات سر انجام دے رہی ہے جس میں چیچہ وطنی میں رائے علی نواز ہسپتال سر فہرست ہے جہاں روزانہ سینکڑوں مریضوں کا علاج ہو رہاہے-

گورنر چوہدری محمد سرور نے کہا کہ جو معاشرے انتہا پسندی اور دہشت گردی کا شکار ہوں وہ تباہ ہو جاتے ہیں۔ پاکستان کی مسلح افواج، پولیس اور عوام نے جوانمردی سے دہشت گردی کا مقابلہ کیا ہے اور اسے شکست دی- انہوں نے کہا کہ بھارت میں مودی سرکار ریاستی دہشت گردی کو پروان چڑھا رہی ہے اور کشمیر کا ہر نوجوان بھارتی ظلم و ستم کا شکار ہو رہا ہے- یہی انتہا پسندی اور دہشت گردی بھارت کو تباہی کی طرف لے جائے گی- انہوں نے کہا کہ مسلم امہ کی زوال کی واحد وجہ حضور ﷺ کی پیروی اور اسوہ حسنہ کو چھوڑنا ہے اس لئے ہمیں حضور کی تعلیمات کو اپنی زندگیوں میں لاگو کرنا چاہیے- تقریب میں کنگ ایڈورڈ یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر خالد مسعود گوندل نے ڈگری حاصل کرنے والے طلبا و طالبات سے حلف لیا اور اپنے خطا ب میں ساہیوال میڈیکل کالج میں ڈگری پروگراموں اور تربیت کے فروغ کے لئے کنگ ایڈورڈ میڈیکل یونیورسٹی کے بھر پور تعاون کی یقین دہانی کرائی- انہوں نے کہا کہ گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور کی رہنمائی میں پنجاب کے اعلی تعلیمی اداروں میں میرٹ کو فروغ دیا جا رہاہے جس سے معیار تعلیم بہتر ہو رہاہے- وائس چانسلر یو ایچ ایس پروفیسر ڈاکٹر جاوید اکرم نے صرف 9 سالوں میں نصابی اور ہم نصابی ترقی پر ساہیوال میڈیکل کالج کو خراج تحسین پیش کیا اور یونیورسٹی کے ہر ممکن تعاون کایقین دلایا- انہوں نے والدین پر زور دیا کہ وہ اپنی بچیوں کو عملی زندگی میں کام کرنے کی اجازت دیں تا کہ 80 فیصد کام نہ کر سکنے والی بچیاں بھی اپنی تعلیم سے معاشرے کی خدمت کر سکیں- کانووکیشن میں ام اقصی، سحرش رفیق، نور سحر اور احسان الشکور کو بہترین سٹوڈنٹ کے میڈلز دیئے گئے- اس سے پہلے کالج پرنسپل پروفیسر ڈاکٹر زاہد کمال صدیقی نے اپنے خطبہ استقبالیہ میں کالج کی نصابی و ہم نصابی کامیابیوں پر تفصیلا روشنی ڈالی اور بتایا کہ کالج نے یو ایچ ایس کے سالانہ امتحانات میں پوزیشنز حاصل کی ہیں جس کی وجہ سے داخلوں کے میرٹ میں کالج 5 دیگر کالجز سے بہتر ہے- انہوں نے مزید بتایا کہ کالج کے قیام سے نہ صرف ساہیوال کے شہریوں کو جدید علاج کی سہولیات میسر آئیں بلکہ دوسرے بڑے شہروں سے بھی مریض علاج کے لئے آ رہے ہیں جو لوگوں کے بڑھتے ہوئے اعتماد کا مظہر ہے- انہو ں نے کالج میں سہولیات کی فراہمی کے لئے شہر کے مخیر حضرات خصوصا فرشتہ فیملی کے تعاون کو بھی سراہا-

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں