209

پاکپتن: کشمیری ظلم کی چکی میں پس رہے ہیں اور انسانی حقوق کی تنظیموں اور اقوام متحدہ خاموش تماشائی بنے ہوئے ہیں، ڈاکٹر شاہد مرتضیٰ چشتی.

پاکپتن (ماجد رضا سے) بھارتی افواج بزدل ہیں، رات کے اندھیرے میں کشمیریوں کے گھروں میں گھس کر نوجوانوں اور بچوں کو اغوا کیا جا رہا ہے، بھارتی قابض فوج گھروں پر چھاپے مار کر ظلم اور تشدد کے پہاڑ توڑ رہی ہے ان خیالات کا اظہارپاکستان سوشل ایسوسی ایشن کے مرکزی سیکرٹری جنرل حکیم لطف اللہ نے البدر ہائی سکول 37 ایس پی روڑ پاکپتن میں کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کیلئے منعقدہ ریلی سے خطاب کرتے ہوئے کیا.

ریلی سے پریس کلب پاکپتن کے صدر وقارفر جگنو، پرنسپل البدر ہائی سکول قاری اسحاق بدر، افضل بشیر مرزا ڈپٹی ڈائریکٹر سوشل ویلفیئر، انجمن فلاح مریضاں کے صدر ڈاکٹر شاہد مرتضی چشتی نے خطاب کیا انہوں نے کہا ہے کہ کشمیر میں خون کی ہولی کھیلی جارہی ہے بھارتی فوج کے ہاتھوں کشمیری خواتین کی عزتیں پامال کی جا رہی ہیں، مودی سرکار کشمیر میں مظلوم کشمیریوں کی منظم نسل کشی کر رہی ہے عا لمی برداری انسانیت کو بچانے کیلئے فوری طور پر اپنا کردار ادا کرے، پرنسپل البدر ہائی سکول قاری اسحاق بدر نے کہا کہ کشمیری جذبہ ایمانی کیساتھ بھارتی مظالم کے سامنے سیسہ پلائی دیوار بنے ہوئے ہیں. مودی اور اسکی فاشٹ تنظیم آر ایس ایس نے کشمیر اورگجرات میں مسلمانوں پر جو مظالم ڈھانے شروع کر دیئے ہیں، مسلمانوں کی املاک مسجدوں میں توڑ پھوڑ اور جانی نقصان پہنچا رہی ہے، دودھ اور خوراک سے محروم بلکتے بچے، دواؤں سے محروم بوڑھے کشمیری ہماری مدد کے منتظر ہیں ڈاکٹر شاہد مرتضی چشتی نے کہا کہ انسانی حقوق کی تنظیموں اور اقوام متحدہ خاموش تماشائی بنے ہوئے ہیں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں