228

خود اعتمادی پیدا کریں ۔۔۔ (محمد عظیم چنڑ)

تحریر: محمد عظیم چنڑ۔

آج کل ماہرین ہر جگہ تربیتی پروگرام میں اس بات پر زور دیتے ہیں کہ خود اعتمادی پیدا کرو، اس کے بغیر معاشرے میں ترقی ممکن نہیں ہے، بہت سے لوگ ان لیکچرز کی بدولت کافی حد تک کامیاب بھی ہوئے ہیں، لیکن سوال یہ ہے کہ جس زندگی کا بھروسہ نہیں ہے اس پہ اعتماد کی بات کرتے ہیں۔ حالانکہ زندگی فانی ہے اور ہم میں سے کسی کو اپنی زندگی کے اگلے لمحے کی خبر نہیں کہ ہم نے زندہ رہنا بھی ہے کہ نہیں، تو پھر اعتماد کس بات کا اس کا مطلب ہرگز یہ نہیں کہ خود اعتمادی بری چیز ہے، مگر اس کے ساتھ ساتھ خدا اعتمادی پیدا کریں، کیونکہ خدا اعتمادی کی کمی کی وجہ سے افراتفری کا عالم ہے۔ لوگ ذہنی دباؤ کا شکار ہیں اور بے شمار سماجی مسائل کا سامنا کر رہے ہیں۔

آ ج کے انسان نے خوداعتمادی تو پیدا کر لی، مگر خدا اعتمادی پیدا کرنے سے قاصر رہا۔ اور اگر یقینی طور پر دور حاضر میں اس فلسفے کو سمجھ لیا جانا چاہیئے۔ اس پر عمل پیرا ہونے کی صورت میں ہم دونوں جہانوں میں سرخرو ہو سکتے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں