245

پاکپتن: مسئلہ کشمیر حل ہو جائے تو پاکستان اور انڈیا ایشاء کی سب سے بڑی طاقت بن جائیں گی، سردار گوریندر پال سنگھ .

پاکپتن (ولی محمد شاکر سے) مسئلہ کشمیر مذاکرات سے حل ہو جائے تو بہتر ہے مسئلہ کشمیر حل ہو جائے تو پاکستان اور انڈیا ایشاء کی سب سے بڑی طاقت بن جائیں گی، پاکپتن سکھ کمیونٹی کا بڑا مذہبی گھر ہے یہاں سے بھی راہداری کھولی جائے ان خیالات کا اظہار سکھ کمیونٹی نیو یارک امریکہ کے چیئرمین سردار گوریندر پال سنگھ نے پریس کلب پاکپتن میں میڈیا سے گفتگو کے دوران کیا.

اس موقع پر سیکرٹری جنرل پاکستان سوشل ایسوسی ایشن حکیم لطف اللہ، چیئرمین پریس کلب پیر امداد حسین، صدر وقار فرید جگنو، جائنٹ سیکرٹری طاہر فرید، آستانہ عالیہ خواجہ عبدالعزیز مکی کے سجادہ نشین دیوان ساجد مشتاق چشتی، جنرل سیکرٹر ی الیکٹرانک میڈیا سید وارث علی شاہ بھی موجود تھے سکھ کمیونٹی نیو یارک کے چیئرمین سردار گوریندر پال سنگھ نے دربار بابا فرید اور درگاہ خواجہ عبدالعزیز مکی پر حاضری دی جہاں سجادہ نشین دیوان ساجد مشتاق چشتی نے ان کی دستار بندی کی.

پریس کلب پاکپتن میں سیکرٹری جنرل پاکستان سوشل ایسوسی ایشن حکیم لطف اللہ نے سردار گوریندر پال سنگھ کو پی ایس اے کی جانب سے گولڈ میڈل اور سرٹیفکیٹ پیش کیا سردار گوریندر پال سنگھ پریس کلب پاکپتن کے صدر وقارفرید جگنو چیئر مین پیر امدادحسین کو کتاب پیش کی اس موقع پر سردار گوریندر پال سنگھ نے میڈیا سے گفتگو کے دوران کہا کہ میرا بچپن کشمیر میں گزرا ہے مسلمانوں کے ساتھ بھائیوں کی طرح رہا ہوں جہاں غلط ہو گا. سکھ کمیونٹی اسے غلط کہے گی مسئلہ کشمیر کی موجودہ صورتحال پر ایسا نہیں ہونا چاہیے بچوں کے سکول جانے پر عائد پابندی ختم ہونی چاہیے، انہوں نے کہا کہ ایسا لگتا پاکستان بالخصوص پاکپتن میرا اپنا گھر ہے انہوں نے کہا کہ پاکپتن میں بابا گرو نانک جی پر اپنی زندگی کے اہم دن گزارے یہ ہماری مذہبی تیرتھ ہے یہاں سے بھی انڈیا پاکستان کی راہ داری کھولی جائے.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں