201

پاکپتن: محکمہ سوشل ویلفیئر کے زیر انتظام سفید چھڑی کے علمی دن کے موقع پر تقریب، انجمن فلاح مریضاں کی طرف سے سفید چھڑیاں تقسیم کی گئیں.

پاکپتن (ولی محمد سے) نابینا افراد ہماری مدد یا ہمدردی کے طلب گار نہیں بلکہ ہماری توجہ کے طلبگار ہیں اور تھوڑی سی کوشش کی جائے تو نابینا افراد سمیت تمام معذور افراد قومی دھارے میں لایا جا سکتا ہے ان خیالات کا اظہار صدر انجمن فلاح مریضاں ڈاکٹر شاہد مرتضیٰ چشتی اور ایڈمنسٹریٹر بلدیہ(اے ڈی سی جی) یاسر حسین کلاسن اور پاکستان سوشل ایسوسی ایشن کے مرکزی سیکرٹری جنرل حکیم لطف اللہ نے یوم سفید چھڑی کے موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کیا.

اس خبر کی میڈیا کوریج دیکھنے کے لیے یہاں کلک کریں

اس موقع پر ڈپٹی ڈائریکٹر سوشل ویلفیئر افضل بشیر مرزا، پریس کلب پاکپتن کے صدر وقارفرید جگنو، تحریک انصاف شعبہ خواتین کی ضلعی صدر رخسانہ منظور بھٹی بھی موجود تھے پاکستان سوشل ایسوسی ایشن کے مرکزی سیکرٹری جنرل حکم لطف اللہ نے کہا کہ پاکستان میں 20لاکھ افراد بصارت سے محروم ہیں جب کہ پوری دنیا میں 45 ملین افراد بصارت سے محروم ہیں، مقررین نے کہا کہ تمام مکاتب فکر کو ایسے سپیشل افرادکی خصوصی توجہ کرنی چاہیے، ڈپٹی ڈائریکٹر سوشل ویلفیئر افضل بشیر مرزا پریس کلب پاکپتن کے صدر وقارفرید جگنو نے کہا کہ نابینا افراد کو قومی دھارے میں شامل کرنا چاہیے اور نابینا افراد ہماری مدد یا ہمدردی کے طلب گار نہیں بلکہ ہماری توجہ کے طلبگار ہیں.

سیمینار کے اختتام پر انجمن فلاح مریضاں کی طرف سے نابینا افراد میں سفید چھڑیاں اور محکمہ سوشل ویلفیئر کی طرف سے با رعائیت سفر کیلئے سفری کارڈ دئے گئے.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں