194

ساہیوال: چراغ تلے اندھیرا، کمشنر آفس ڈینگی مچھر کی آماجگاہ بن گیا۔

ساہیوال (ملک دلاور سلطان سے) چراغ تلے اندھیرا، کمشنر آفس ڈینگی مچھر کی آماجگاہ بن گیا۔ ماتحت عملہ اور سائلین کی زندگیاں داو پر لگ گئیں۔ محکمہ صحت اور میونسپل کارپوریشن کارروائی سے گریزاں۔

You can only have direct referrals after 15 days of being a user and having at least 100 clicks credited

ڈینگی بریگیڈ اور کمشنر کی کارکردگی صفر۔ ساہیوال کی 25لاکھ آبادی کو ڈینگی مچھر کے رحم وکرم پر چھوڑ دیا گیا ہے۔کمشنر ندیم الرحمن میونسپل کارپوریشن کے ایڈمنسٹریڑبھی ہیں جہاں باقاعدہ طور پر ڈینگی سے نپٹنے کے لیے ڈینگی بریگیڈ کے نام سے ایک ونگ موجود ہے۔ ڈینگی کی وبا کو روکنے اورکنٹرول کرنے کی ذمہ داری میونسپل حکام اور محکمہ صحت کی قرار دی جاتی ہے۔ امسال محکمہ صحت اور میونسپل کارپوریشن نے ڈینگی سے نپٹنے کے لیے کوئی عملی اقدامات نہ اٹھائے ہیں۔ کاغذی کارروائیاں مچھر روکنے میں ناکام ثابت ہو رہی ہیں۔

کمشنر ندیم الرحمن میونسپل کارپوریشن ساہیوال کے ایڈمنسٹریٹر بھی ہیں جہاں ڈینگی بریگیڈ کی گاڑیاں اور عملہ ڈینگی مچھر کے خلاف کارروائیوں سے قاصر ہیں۔ کمشنر آفس بذات خود ڈینگی مچھر کی آماجگاہ بن چکا ہے جن کی تلفی کے لیے عملی اقدامات صفر ہیں۔ کمشنر آفس کا عملہ اور آنے والے سائلین ڈینگی مچھر کے رحم وکرم پر ہیں جو اپنے فرائض چھوڑ کر ہاتھوں سے مچھر مارتے دکھائی دیتے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں