204

ساہیوال: وائرس سے ہونے والی بیماریوں کو روکنے کا واحد ذریعہ احتیاط ہے. پروفیسر ڈاکٹر زاہد کمال صدیقی.

ساہیوال (ملک دلاور سلطان سے) ساہیوال میڈیکل کالج کے پرنسپل پروفیسر ڈاکٹر زاہد کمال صدیقی نے کہا ہے کہ وائرس سے ہونے والی بیماریوں کو روکنے کا واحد ذریعہ احتیاط ہے کیونکہ ایک شخص سے دوسرے شخص کو ہونے والی بیماریوں کو ویکسینیشن اور ادویات سے روکنا مشکل ہے-

You can only have direct referrals after 15 days of being a user and having at least 100 clicks credited

ضرورت اس امر کی ہے کہ پولیو اور ڈینگی جیسی خطر ناک بیماریوں کو ختم کر نے کے لئے عوام کو شعور دیا جائے تا کہ وہ خود احتیاطی تدابیر اختیار کر کے ان بیماریوں سے بچ سکیں- انہوں نے یہ بات ڈی ایچ کیو ہسپتال میں ان دونوں خطرناک بیماریوں سے آگہی کے لئے ہونے والی واک اور سیمینار کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کہی جس میں سی ای او ہیلتھ ڈاکٹر اظہر نقوی کے علاوہ پروفیسر ڈاکٹر نثار احمد، پروفیسر ہارون الرحمن گیلانی، ڈاکٹر اختر محبوب، ڈاکٹر عمر اجمل، ڈاکٹر شاہد نذیر، ڈاکٹر عامر دیوان، ڈاکٹر خالد خان، پیرا میڈیکل سٹاف، کالج سٹوڈنٹس اور عام شہریوں کی کثیر تعداد نے شرکت کی- انہوں نے کہا کہ ڈینگی بخار سے بچنے کا واحد ذریعہ مچھروں کی افزائش کو روکنا ہے جو سب سے زیادہ گھروں میں موجود صاف پانی کے برتنوں، گملوں، کیاریوں اور کھلی جگہوں پر افزائش کرتا ہے- ضروری ہے کہ عام آدمی اس بخار کے خطرے کو سمجھے اور اپنے اپنے گھروں اور گردونواح میں صفائی کویقینی بنانے کے ساتھ ساتھ پانی کو کھڑا ہونے سے روکے-

اسی طرح پولیو جیسی عمر بھر کی معذوری دینے والی بیماریوں کو روکنے کا واحد ذریعہ ویکسینشن ہے جس کے لئے معاشرے کے تمام طبقات کو فعال کردار ادا کرنا چاہیے- انہوں نے بتایا کہ سال 2019 میں اب تک پاکستا ن میں پولیو کے 76 کیسز رپورٹ ہو چکے ہیں جو پچھلے کئی سالوں میں سب سے زیادہ ہیں- یہ کیسز نہ صرف محکمہ صحت سے وابستہ افراد بلکہ عام آدمی کے لئے بھی لمحہ فکریہ ہیں اس لئے ہر شخص 5 سال سے کم عمر بچوں کو پولیو کے دو قطرے ضرور پلائے تا کہ نئی نسل کو عمر بھر کی معذوری سے بچایا جا سکے- واک کے شرکاء نے بینرز اور پلے کارڈز بھی اٹھا رکھے تھے جن پر آگہی کے لئے نعرے درج تھے-

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں