194

ساہیوال: افسران اپنے رویوں میں تبدیلی لائیں اور سائلین کے مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل کریں. محمد رمضان خالد جوئیہ، ایڈیشنل ایڈووکیٹ جنرل.

ساہیوال (خصوصی رپورٹ) ایڈیشنل ایڈووکیٹ جنرل پنجاب محمد رمضان خالد جوئیہ نے کہا ہے کہ افسران اپنے رویوں میں تبدیلی لائیں اور سائلین کے مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل کریں جس سے محکموں پر کیسز کا دباؤ کم ہو گا اور وہ اپنے کام پر توجہ دیں سکیں گے۔

عوام کو ریلیف فراہم کرنا ہر محکمے کے سربراہ کی ذمہ داری ہے جس سے صرف نظر نہیں کیا جا سکتا۔ انہوں نے یہ بات ضلع کونسل ہال میں ضلعی افسران کے خصوصی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی جس میں انہوں نے ہائیکورٹ میں زیر التوا مقدمات کی نوعیت اور وجوہات کے بارے میں تفصیلی آگہی فراہم کی۔ ڈپٹی کمشنر محمد زمان وٹو اور پروٹو کول آفیسر مبشر بخاری بھی بریفنگ میں موجود تھے۔ انہوں نے افسران پر زور دیا کہ وہ متعلقہ قوانین کا تفصیلی مطالعہ کریں اور ان میں ہونیوالی تبدیلیوں سے بھی آگاہ رہیں تا کہ غیر ضروری تاخیر اور محکمے پر مقدمات سے بچا جا سکے۔ انہوں نے کہا کہ مقدمات کی درست پیروی نہ کرنا ماتحت سٹاف کو پیروی کیلئے بھیجنا محکموں کے خلاف مقدموں کے فیصلوں کی ایک بڑی وجہ ہے، جس کیلئے ضروری ہے کہ آفیسر ہر مقدمے کا خود مطالعہ کریں اور اس کی مناسب پیروی کریں۔

ایڈیشنل ایڈووکیٹ جنرل پنجاب ملتان بنچ محمد رمضان خالد جوئیہ نے افسران پر زور دیا کہ وہ توہین عدالت کے کیسز سے بچنے کیلئے مقدمات کی سماعت میں دلچسپی لیں اور عوام کو ضروری ریلیف فراہم کریں۔ انہوں نے ہدایت کی کہ کیسز کے جوابات ذاتی دلچسپی سے تیار کروائے جائیں اور انہیں ایڈووکیٹ جنرل آفس سے بھی ضرور چیک کروایا جائے۔ بریفنگ کے اختتام پر سوال جواب کی نشست بھی ہوئی جس میں ایڈووکیٹ جنرل نے افسران کی طرف سے اٹھائے گئے مختلف سوالات کے جوابات دیے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں