202

ساہیوال: سول سوسائٹی اور کمیونٹی پالیسنگ کو بروئے کا ر لا کر جرائم کی روک تھام کو یقینی بنا یا جا ئے، کیپٹن (ر)محمد علی ضیاء، ڈی پی او.

ساہیوال (پریس ریلیز) SI غلام عباس پی آر او ٹو ڈی پی او کی طرف سے جاری کردہ پریس ریلیز کے مطابق ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر کیپٹن (ر)محمد علی ضیاء نے کہا ہے کہ “ساہیوال سول سوسائٹی اور کمیونٹی پالیسنگ کو بروئے کا ر لا کر جرائم کی روک تھام کو یقینی بنا یا جا ئے۔عوام کو عزت اور احترام دیں تا کہ پولیس اور سول سوسائٹی کے مابین بڑھے ہو ئے فاصلوں کو ہمیشہ کے لیے ختم کیا جا سکے۔ جرائم پیشہ عناصر کے خلاف جاری کریک ڈاؤن میں مزید تیزی لائی جا ئے، عید الاضحی اور 14اگست یوم آزادی کے موقع پر کسی بھی نا خوشگوار واقع سے بچنے کے لیے فول پروف سیکیورٹی کے انتظامات کو یقینی بنایا جا ئے”۔ وہ گزشتہ روز اپنے آفس کے میٹنگ روم میں پولیس افسران سے ماہانہ کرائم میٹنگ کی صدارت کررہے تھے۔ جس میں SP انویسٹی گیشن میڈم شاہدہ نورین، ASP/SDPO سٹی سرکل میڈم ڈاکٹر انعم فریال، SDPO صدر سرکل فلک شیر خان بھٹی، SDPO چیچہ وطنی سرکل ساجد محمود گوندل، DSP ٹریفک پیر ریاض، انچارج سیکیورٹی انسپکٹر سعید خان لودھی اورSHOs ضلع ہذا نے شرکت کی۔

دوران میٹنگ انہوں نے پولیس افسران کو ہدایت کی کہ اشتہاریوں کے خلاف جاری کریک ڈاؤ ن مہم میں مزید تیزی لائیں اورجرائم پیشہ عناصر، عادی ریکارڈ یافتہ مجرمان، جیل سے رہا شدگان کے خلاف سخت ایکشن لیاجائے اورجرائم کی روک تھام کے لیے موثرطریقے سے کار وائی عمل میں لائی جائے۔ میٹنگ میں جملہ پولیس افسران سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ عید الاضحی کی آمد آمد ہے مویشی چوروں کے خلاف سخت ایکشن لیاجائے اور شہر کے تمام داخلی خارجی و اہم راستوں پر مال مویشی والی گاڑیوں کو اچھی طرح چیک اور تصدیق کرنے کے بعد جا نے دیا جا ئے۔ ٹھیکری پہرہ اورموبائل گشت کے نظام کو مزید فعال کیا جا ئے۔ ایلیٹ فورس کی موبائل گشت کو بھی موثر بنا یا جا ئے۔

افسران کی کا ر کر دگی کے حوالے سے کہا کہ پینڈ نگ چالان اور د رخواستیں بروقت نمٹائی جائیں۔ مقدمات کو جلد از جلد میرٹ پر یکسو کرکے عوام کو ہرممکن ریلیف فراہم کریں۔ شہرکے اہم مقامات رش والی جگہوں، خرید داری مراکز، تعلیمی اداروں اورعبادت گاہوں کی سکیورٹی یقینی بنائی جائے اورتمام اہم مقامات پر مقامی انتظامیہ سے مل کرسی سی ٹی وی کیمرہ جات کی تنصیب کروائی جائے تاکہ جرائم پیشہ عناصرکی نقل وحرکت کو مانیٹرکرکے جرائم کی روک تھام کی جاسکے۔ انہوں نے کہا کہ جوملازمین اچھی کارکردگی کامظاہرہ کریں گے ان کو سرٹیفکیٹ دیئے جائیں گے۔ جبکہ خراب کارکردگی پر سخت مواخذہ کیاجائے گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں