212

ساہیوال: موجودہ ملکی حالات میں باہمی اتحاد اور بھائی چارہ کی اشد ضرورت ہے، ندیم الرحمن، کمشنر.

ساہیوال (خصوصی رپورٹ) کمشنر ساہیوال ڈویژن ندیم الرحمن نے کہا ہے کہ باہمی اتحاد اور بھائی چارہ موجودہ ملکی حالات کی اہم ضرورت ہے اور ہمیں متحد ہو کر اندونی و بیرونی دشمنوں کے نا پاک عزائم کو ناکام بنانا ہے- علماء کرام پر بھاری ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ وہ عوام کی رہنمائی کریں اور انہیں امن، محبت اور آتشی کا درس دیں تا کہ معاشرے میں باہمی رواداری کو فروغ ملے- انہوں نے یہ بات اپنے دفتر میں ڈویژنل امن کمیٹی اور بین المذاہب کمیٹی کے مشترکہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی.

اجلاس میں آر پی او ہمایوں بشیر تارڑ، ایڈیشنل کمشنر ایس ڈی خالد، تینوں اضلاع کے ڈپٹی کمشنرز اور ڈی پی اوز اور تمام مکاتب فکر کے علماء کرام نے شرکت کی- اجلاس سے مولانا سردار علی سردار، مولانا ظفر الحق لکھوی، مولانا حسن معصومی، سید اعجاز حسین شاہ، قاری بشیر احمد، شیخ اعجاز احمد، حاجی احسان الحق ادریس اور قاری عبدالباسط نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ دشمن کی سازشوں کو ناکام بنانے کے لئے باہمی اتحاد اور اخوت وقت کا تقاضا ہے اور علماء کرام محرم الحرام کے دوران بھائی چارے اور فرقہ وارانہ ہم آہنگی قائم کرکے ان سازشیوں کے عزائم کو ناکام بنا سکتے ہیں- انہوں نے کہا کہ ساہیوال ڈویژن میں مثالی فرقہ وارانہ ہم آہنگی موجود ہے جسے مزید مضبوط بنانے کے لئے تعاون کو فروغ دیا جائے گا-

علماء کرام نے محرم الحرام کے دوران امن و امان برقرار رکھنے کے لئے انتظامیہ کو ہر ممکن تعاون کی یقین دہائی کرائی اور کہا کہ علاقے میں کبھی فرقہ واریت کا مسئلہ پیدا نہیں ہوا- مسیحی برادری کی نمائندگی کرتے ہوئے ایلڈر دلبر جانی نے ڈویژن میں رہائش پذیر 70 ہزار مسیحیوں کی طرف سے بھی تمام طبقات فکر کے علماء کرام کو حمایت کی یقین دہانی کرائی- کمشنر ندیم الرحمن نے علماء کرام کے جذبے کو سراہا اور امن کمیٹی کو خوبصورت گلدستہ قرار دیتے ہوئے اس توقع کا اظہار کیا کہ محرم الحرام کے دوران امن و امان کو برقرار رکھنے میں تمام مکتب فکر کے علماء اپنا اہم کردار ادا کریں گے- آخر میں ملک کی سلامتی، امن اور کشمیر کی آزادی کے لئے خصوصی دعا بھی کرائی گئی –

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں