288

پاکپتن: ڈی ایچ کیو ہسپتال کروڑوں روپے فنڈز کے باوجود سلاٹر ہاوس بن چکا ہے انتظامیہ نوٹس لے، شہریوں کا ڈی سی آفس کے سامنے شدید بارش میں احتجاجی دھرنا.

پاکپتن (حیدر علی شہزاد سے) ڈی ایچ کیوہسپتال میں ڈاکٹرز کے ہاتھوں مریضوں کی اموات کے بڑھنے کے خلاف شہریوں کا موسلا دھار بارش میں ڈی سی آفس کے باہر احتجاجی دھرنا، آمدو رفت کو بند کرکے شدید نعرے بازی، ذمہ داروں کے خلاف کاروائی کا مطالبہ، بتایا گیا ہے کہ ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال پاکپتن میں معمولی بیماریوں میں مبتلا علاج کیلئے مریضوں کی ڈاکٹرز کی مبینہ غفلت کے باعث مریضوں کی اموات کے بڑھتے واقعات کے خلاف شہر کی سماجی تنظیموں اور کسانوں نے ڈی سی آفس کا گھراؤ کرتے احتجاجی دھرنا دے دیا، احتجاج کی قیادت صدر پریس کلب پاکپتن وقار فرید جگنو پاکستان کسان اتحاد پنجاب کے صدر چوہدری رضوان اقبال صدر مرکزی انجمن تاجران چوہدری اظہر محمود چیئرمین رانا محمد رمضان تحریک انصاف خواتین ونگ کی ضلعی صدر رخسانہ منظور بھٹی نے کی احتجاج میں سماجی تنظیموں اور کسانوں کی بہت بڑی تعداد نے شرکت کی چند روز قبل ڈی ایچ کیو ہسپتال پاکپتن میں ٹوٹے ہاتھ کا آپریشن کروانے آئے خرم فیاض کی بے ہوشی کی دوا کی مبینہ زیادتی سے آپریشن ٹیبل پر ہلاکت پر انتظامیہ کی خاموشی کے خلاف مرحوم کے ورثاء موسلا دھار بارش میں ضلعی انتظامیہ کے خلاف شدید نعرے بازی کی شرکاء سے خطاب کے دوران قائدین نے کہاکہ کروڑوں روپوں کے فنڈز کے باوجود ڈی ایچ کیو ہسپتال سلاٹر ہاؤس کی شکل اختیار کرچکا ہے۔ انہوں نے حکومت سے ذمہ داروں کے خلاف کاروائی کا مطالبہ کیا ہے.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں