211

پاکپتن: نہ زمین بھٹی نہ آسمان گرا، حقیقی بیٹے نے اپنی بیوہ ماں کو تشدد کا نشانہ بنانے کے بعد گھر سے نکال دیا.

پاکپتن (خرم شہزاد سے) حقیقی بیٹے نے اپنی بیوہ ماں کو تشدد کا نشانہ بنانے کے بعد گھر سے نکال دیا بیوہ معمر خاتون دربدر کی ٹھوکریں کھانے لگی پولیس کا بھی کاروائی سے انکار.

تفصیلات کے مطابق تھانہ سٹی کے علاقہ محلہ جھجھرانوالاکی رہائشی ضعیف العمر خاتون انور بیگم بیوہ حق نواز ڈھڈی نے میڈیا کو بتایا کہ اس نے ساری زندگی لوگوں کے برتن دھو کر گھروں میں محنت مزدوری کر کے انتہائی مشکل حالات میں اپنے بچوں کو تعلیم دلوائی اور ان کی پرورش کی، اب میں جب بڑھاپے کی عمر میں ہوں تو حقیقی بدبخت بیٹے محمد نواز ڈھڈی نے اپنی بیوی کے ہمراہ وحشیانہ تشدد کانشانہ بنا کر میرے زاتی ملکیتی مکان سے نکال دیا، اب میں کبھی سڑکوں فٹ پاتھ، لوگوں کے گھروں، دربار بابا فرید سوتی ہوں، پولیس کو تحریری درخواست دی مگر پولیس اہلکار سارا دن مجھے تھانے میں بیٹھا کر گھر بھیج دیتے ہیں، تھانیدار کہتا ہے کہ تمہارے مرنے کا وقت ہے درخواست بازی چھوڑ دو، ضعیف العمر خاتون انور بیگم بیوہ حق نواز ڈھڈی نے چیف جسٹس آف پاکستان وزیر اعظم پاکستان، وزیر اعلیٰ پنجاب، آئی جی پنجاب، آر پی او ساہیوال، ڈی پی او پاکپتن انسانی حقوق کی تنظیموں سے اپیل کی ہے کہ ایک ضعیف العمر بیوہ ماں کی فریاد سنی جائے،میرے ناخلف بیٹے کے خلاف کاروائی کی جائے مجھے میرا مکان واپس دلوایا جائے.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں