198

پاکستانی معیشت بہتر ہوئی: صدر اقتصادی فورم، چیلنجز کا سامنا، ایک سال میں نمایاں تبدیلی آئیگی: گورنر سٹیٹ بنک

اسلام آباد (نمائندہ خصوصی) وزیراعظم عمران خان سے عالمی اقتصادی فورم کے صدر بروج برینڈے نے ملاقات کی۔ وزیراعظم نے پاکستان میں سکلز کی کمی کو ختم کرنے کیلئے نیشنل ایکسیلریٹر کے قیام کا اعلان کیا۔ نیشنل ایکسیلریٹر کا قیام ورلڈ اکنامک فورم اور پنجاب سکلز ڈویلپمنٹ فنڈ کے اشتراک سے ہوگا۔ وزیراعظم عمران خان نے صدر عالمی اقتصادی فورم کو معاشی شعبے میں اصلاحاتی ایجنڈے سے آگاہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ حکومت معاشی ترقی کیلئے سٹرٹیجک شعبوں پر توجہ دے رہی ہے۔ وزیراعظم نے نیشنل ایکسیلریٹر کے ممبر کیلئے پاکستان کے انتخاب پر وفد کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ عالمی اقتصادی فورم کے رابطے پاکستانی نوجوانوں کیلئے نئے مواقع فراہم کریں گے۔ وزیراعظم نے عالمی اقتصادی فورم کے وفد کو پرامن ہمسائیگی پالیسی سمیت علاقائی امور سے آگاہ کیا۔ بروج برینڈے نے وزیراعظم کو ڈیووس میں جنوری 2020ء میں فورم کی 50 ویں سالگرہ میں شرکت کی دعوت دی۔ علاوہ ازیں اسلام آباد میں ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے عالمی اقتصادی فورم کے صدر نے کہا ہے کہ پاکستانی معیشت، سلامتی اور توانائی شعبے میں بہتری آئی ہے اور وزیراعظم عمران خان تبدیلی لا رہے ہیں۔ پاکستان کی معیشت میں مثبت پیش رفت ہو رہی ہے۔ گزشتہ دورے پر آیا تو پاکستان کو لوڈ شیڈنگ کا سامنا تھا۔ اگرچہ اب بھی پاکستان کو چیلنجز درپیش ہیں پاکستان میں سکیورٹی کی صورتحال اور توانائی کے شعبے میں بہتری آئی ہے۔ حکومت سول سوسائٹی اور نجی شعبے کے ساتھ ملکر کام کرنا چاہتے ہیں۔ پاکستان میں سرخ فیتے کے مسائل بھی حل کرنے کی ضرورت ہے۔ ٹیکس نیٹ میں اضافہ بہت ضروری ہے۔ آئی ایم ایف کے ساتھ معاہدہ مثبت پیش رفت ہے۔ معاون خصوصی برائے پٹرولیم ندیم بابر اور صدر عالمی اقتصادی فورم کے درمیان بھی ملاقات ہوئی جس میں قابل تجدید انرجی پالیسی انرجی سیونگ اور پیداوار پر گفتگو کی گئی۔ انہوں نے کہا کہ گیس کی قیمتوں میں سلیب سے گھریلو صارفین کو فائدہ ہوگا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں