210

ملتان: ہیلتھ کیئر کمیشن میں حکماء کو نمائندگی دی جائے. حکیم ممتاز قرشی

ملتان (محمد طارق شاد سے) آل پاکستان اطبائ الائنس کے مرکزی صدر حکیم ممتاز قرشی نے کہا ہے کہ ہمیں پنجاب ہیلتھ کیئر کمیشن پر کوئی اعتراض نہیں‌ہے لیکن ہمارا حکومت پنجاب اور محکمہ ہیلتھ سے ایک ہی مطالبہ ہے کہ کم از کم ہیلتھ کیئر کمیشن میں حکماء کو نمائندگی دی جائے. وہ گزشتہ روز ٹی ہاوس میں طبی سیمینار سے خطاب کررہے تھے انہوں نے کہا کہ پنجاب حکومت نے صوبہ بھر میں سرکاری ہسپتالوں میں حکماء کی سیٹوں پر پابندی عائد کی ہوئی ہے آج تک حکماء کو فٹنس سرٹیفکیٹ جاری کرنے کی اجازت نہیں ہے. لیکن آج بھی حکمائ بڑے پیمانے پر عوام کی خدمت کرنے میں مصروف ہیں. حکیم محمد خالد محمود نے کہا کہ حکماء نے ہمیشہ ہیلتھ ڈیپارٹمنٹ کے قوانین کی پاسداری کی ہے اور احترام کیا ہے. لیکن محکمہ صحت پنجاب نے آج تک ہمارے جائز مطالبات تسلیم نہیں کئے بلکہ حکماء کو ہمیشہ نظر انداز کیا ہے کہ انہیں پنجاب ہیلتھ کیئر کمیشن میں نمائندگی دی جائے. سیمینار سے مہمان خصوصی حکیم عرفان صابر، صاحبزادہ حکیم انقلاب دوست میں صابر، حکیم لیاقت علی، حکیم سمیع اللہ، حکیم محمد یوسف، حکیم خالد محمود، ہارون سومرو نے بھی خطاب کیا اور قومی صحت پالیسی اور طبی کونسل میں اطباء کے کردار پر بات چیت کی.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

ملتان: ہیلتھ کیئر کمیشن میں حکماء کو نمائندگی دی جائے. حکیم ممتاز قرشی” ایک تبصرہ

  1. ویسے پنجاب ہیلتھ کیئر کمیشن میں نیشنل کونسل برائے طب۔ نیشنل کونسل برائے ہومیوپیتھی۔ پاکستان نرسنگ کونسل اور پی ایم ڈی سی کا ایک ایک نمائندہ موجود ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں