183

اسلام آباد: فوکل پرسن برائے انسانی حقوق سندھ افتخار احمد خان کو عہدے سے ہٹایا جاتا ہے، شیریں مزاری، وزیر برائے انسانی حقوق.

اسلام آباد (خصوصی رپورٹ) وزیربرائے انسانی حقوق شیریں مزاری نے سندھ میں انسانی حقوق کے فوکل پرسن افتخار احمد خان کو تحقیقات کے بعد عہدے سے ہٹا دیا، ان پر الزام ثابت ہو گیاہے کہ انہوں نے گھوٹکی میں ایک شخص کو تشدد کا نشانہ بنایا۔ تفصیلات کے مطابق شیریں مزاری نے ٹویٹر پر پیغام جاری کرتے ہوئے افتخار احمد کو ہٹانے کا نوٹیفکیشن بھی جاری کردیا جس میں 29 جولائی یعنی آج کی تاریخ درج ہے، نوٹیفکیشن میں کہا گیاہے کہ نئے شواہد سامنے آنے کے بعد سندھ میں فوکل پرسن افتخار احمدخان فوری طور پر عہدے سے ہٹایا جارہاہے۔ یاد رہے کہ پی ٹی آئی کے رہنما افتخار احمد خان کی تعیناتی کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا گیا تھا اور الزام عائد کیا گیا تھا کہ وہ اپنے ملازموں کے ساتھ غیر انسانی رویہ اختیار کرتے رہے ہیں۔ شیریں مزاری نے اپنے ٹویٹ کے ساتھ پیغام درج کر تے ہوئے یہ بھی لکھا کہ ”میں اس سے قبل جاری ہونے والے نوٹیفکیشن پر بھی اپنے پچھتاوے کا اظہار کرنا چاہتی ہوں“۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں