221

ساہیوال: 88ملین ڈالر کے خرچ سے شہر کی تمام سیوریج او رپانی سپلائی لائنوں کو تبدیل کیا جائے گا، ندیم الرحمن.کمشنر.

ساہیوال (سید طمطراق شاہی سے) کمشنر ساہیوال ڈویژن ندیم الرحمن نے کہا ہے کہ شہریوں کو پینے کے صاف پانی اور سیوریج کی بہترین سہولیات کی فراہمی پنجاب حکومت کی ترجیحات میں شامل ہے اور ساہیوال کے شہریوں کو ان بنیادی سہولیات کی فراہمی کے لئے ایک جامع منصوبے کا آغاز کیا جا رہا ہے، 88ملین ڈالر کے اس منصوبے کے تحت شہر کی تمام سیوریج او رپانی کی سپلائی کی لائنوں کو تبدیل کیا جائے گا، نئی لائنیں بچھائی جائیں گی، 10مزید اوور ہیڈ ٹینک بنائے جائیں گے اور 36 واٹر فلٹریشن پلانٹس لگائے جائیں گے جبکہ ان آبادیوں میں بھی یہ سہولیات فراہم کی جائیں گی جو ان سے محروم ہیں- انہو ں نے یہ بات اپنے دفتر میں انٹر میڈیٹ انفراسٹرکچر ڈویلپمنٹ پروگرام کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی جس میں ایڈیشنل کمشنر ایس ڈی خالد، ڈائریکٹر ڈویلپمنٹ انیس الرحمن، ڈائریکٹر لوکل گورنمنٹ قاری خالد نذیر کے علاوہ ایشیائی ترقیاتی بنک، پی اینڈ ڈی اور میونسپل کارپوریشن کے افسران نے شرکت کی- انہو ں نے اس جامع منصوبے کو ساہیوال کے لئے انتہائی اہم قرار دیا اور ہدایت کی کہ شہر کی 25 سالہ ضروریات کو مدنظر رکھ کر منصوبہ تیار کیا جائے اور پہلے مرحلے میں پانی اور سیوریج کی خراب لائنوں کو تبدیل کیا جائے تا کہ شہریوں کو آلودہ پانی کی فراہمی روکی جائے- انہو ں نے میونسپل کارپوریشن کے چیف آفیسر کو ہدایت کی کہ وہ شہر میں لگے تمام فلٹریشن پلانٹس کی صفائی اور فلٹرز کی تبدیلی کو یقینی بنائیں- اجلاس میں نیسپاک کے نمائندے نے بتایا کہ شہر میں سیوریج لائنوں کو تبدیل، نئی لائنوں کی تنصیب اور ٹریٹمنٹ پلانٹ پر 9ارب 20کروڑ جبکہ پینے کے صاف پانی کی خراب لائنوں کی تبدیلی، نئی لائنوں کی تنصیب، 70مزید ٹیوب ویلز اور 36 واٹر فلٹریشن پلانٹوں پر 2 ارب 40 کروڑ روپے خرچ ہونگے- کمشنر ندیم الرحمن نے شہر کا کوڑا کرکٹ ٹھکانے لگانے کے لئے لینڈ فل سائٹ کو ڈویلپمنٹ کرنے کے لئے اربن یونٹ سے قریبی رابطہ رکھنے کی بھی ہدایت کی تا کہ دونوں منصوبے بر وقت مکمل ہوں اور ان سے شہریوں کو بہتری سہولیات میسر آ سکیں-

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں