206

ساہیوال: ڈی ایچ کیو ساھیوال کے قصائی انتظامی ڈاکٹرز کا اپنی خونی جلادی چھپانے کے لیے نیا حربہ

ساہیوال (میاں محمد وقار یعقوب سے) ڈی ایچ کیو ساھیوال کے قصائی انتظامی ڈاکٹرز کا اپنی خونی جلادی چھپانے کے لیے نیا حربہ. تفصیلات کے مطابق منسٹر ہیلتھ پنجاب و سیکرٹری ہیلتھ کے حکم پر ڈی ایچ کیو ٹیچنگ ہسپتال ساھیوال میں صحافیوں کی انٹری بند کر دی گئی ہے۔ صحافتی حلقوں کا کہنا ہے کہ یہ بات سمجھ سے بالا تر ھے کہ ایسا کون سا نیا قانون اس حکومت نے پاس کیا ہے جو ہر سرکاری ادارہ میڈیا کے حوالے سے اپنی ذاتی پالیسی بنا کر رائج کر رہا ھے۔ آئے روز کسی نہ کسی ادارے میں پابندی لگائی جا رہی ہے۔ محکمہ ہیلتھ والے اپنی غلطیاں چھپانے کے لیے ایسے حربے استعمال کر رھا ہے یا معاملہ کچھ اور ھے۔ کیونکہ اس سے پہلے ہیلتھ منسٹر صاحبہ کے حوالے سے لاہور کے ایک بڑے ہسپتال کے ایم ایس کا بیس لاکھ والا سکینڈل بھی ہم سبھی کو یاد ہی ہے.

صحافتی حلقوں کا کہنا ہے کہ ہسپتال انتظامیہ و ڈاکٹرز اپنی غلطیاں چھپا نہیں پائیں گے بے جا پابندیوں کے باوجود صحافی غلطیوں کی نشاندہی کرنے کی ذمہ داری ادا کرتے رہیں گے.

ینگ جرنلسٹ سوسائٹی انٹرنیشنل نے اس اقدام کی بھرپور مذمت کرتے ہوئے حکومت وقت سے مطالبہ کیا ہے کہ میڈیا پر پابندی کی بجائے عوام کو ڈلیور کرنے کی کوشش کی جائے تو صحافی وہی دکھائیں گے جو ان کو نظر آئے گا.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں