232

پاکپتن: بچوں میں سمارٹ فون کا استعمال نسل نو کی تباہی کا سبب بن رہا ہے. حکیم لطف اللہ

پاکپتن (ڈاکٹر امین سے) بچوں میں سمارٹ فون کا استعمال نسل نو کی تباہی کا سبب بن رہا ہے ان خیالات کا اظہار پاکستان سوشل ایسوسی ایشن کے مرکزی سیکرٹری جنرل حکیم لطف اللہ نے جاری کئے گئے تحریری بیان میں کیا انہوں نے کہا کہ اس بات سے انکار نہیں کہ علم مومن کی میراث ہے، ہم انفارمیشن کمیونیکیشن ٹیکنالوجی کو اپنائے بغیر علم کی دوڑ میں دنیا کا مقابلہ نہیں کرسکتے، زندگی کے تمام شعبے ICT سے استفادہ کر رہے ہیں سمارٹ فون دنیا بھر سے آپ کے رابطے کا ذریعہ ہے مگر اس کا مطلب یہ ہرگز نہیں کہ آپ کم عمر بچوں کو رش والے روڈ پر گاڑی تھما دیں یا آگ سے جلتا کوئلہ دے دیں آج کل کی مائیں اپنے ہاتھوں سے اپنے بچوں کو میڈیا کے حوالے کررہی ہیں، بچے دنیا جہاں کی ہر چیز کو اپنے دل و دماغ میں جگہ دے رہے ہیں جو ہمارے کلچر اور دین فطرت اور انسانیت کے سخت خلاف ہے. سمارٹ فون کی مدد سے کسی بھی چیز تک رسائی کا دائرہ کار بہت زیادہ وسیع ہوگیا ہے. آج جرائم میں اضافہ کا سبب بچوں میں IT کا بے دریغ استعمال بھی ہے. یہ ان کو کرائم کرنے کا طریقہ جرائم چھپانے کا طریقہ ریپ کرنے کا طریقہ جرائم کی تربیت پورن گرافی بغیر محنت الہ دین کے چراغ کی طرح چیزوں کا حصول ممکن ہوگیا ہے. بچپن سے جو چیزیں بچوں کے دل و دماغ پر بیٹھا دی جائیں تو ان کو دماغ سے کوئی بھی نہیں نکال سکتا، اگر بچوں کو سمارٹ فون دینا ہے تو اس میں ایسے پروگرام انسٹال کریں جو بچوں کے دماغ کی صلاحیتوں کو بڑہائیں اور ان پروگراموں کو تیار کرنیوالے ایسے لوگ ہوں جنہوں نے بچوں کی نفسیات میں PHD کی ہو. حالات کی سنگینی کو سمجھتے ہوئے ضرورت اس امر کی ہے کہ قوم کی ان ماؤں کی تربیت بھی کی جائے.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں