241

ملک میں بلا امتیاز احتساب خوش آئیند لیکن حکومت وی آئی پی پروٹوکول کے خاتمہ میں ناکام ہوچکی ہے. صابر بخاری

لاہور (اسد الیاس سے) ملک میں کرپشن اور سٹیٹس کو کے خاتمے کیلئے کام کرنے والی تنظیم سنجوک نے کرپشن کے خاتمے کیلئے ملک میں جاری بلا امتیاز احتساب کو خوش آئند قرار دیا ہے۔ سنجوک کے صدر صابر بخاری کے مطابق کوئی بھی ملک اور معاشرہ اس وقت تک ترقی نہیں کر سکتا جب تک وہاں بلا امتیاز احتساب نہ کیا جائے اورکرپشن کے خاتمے اور ملکی وسائل کو تمام طبقوں میں برابری کی سطح پر تقسیم نہ کیا جائے ۔مگربدقسمتی سے پاکستان میں طاقتور اور با اثر افراد کی بے پناہ کرپشن ،اور سٹیٹس کو کی وجہ سے ملک کی اقتصادی صورتحال انتہائی مخدوش ہو چکی ہے۔انہوں نے کہا کہ ماضی میں ہمیشہ ان طاقتور افراد کیخلاف احتساب کا ڈرامہ رچایا جاتا رہا ۔موجود ہ حکومت کو چاہیے کہ طاقتور اور سٹیٹس کو کی حامل شخصیات کیخلاف بلا امتیازاحتساب کی کارروائی جاری رکھے کیونکہ اگر آج کرپشن اور سٹیٹس کو کے سامنے بند نہ باندھا گیا تو ملک کو ناقابل تلافی نقصان پہنچ سکتا ہے۔صابر بخاری نے کہا کہ اپوزیشن کیساتھ حکومتی کرپٹ وزراء ، ارکان اسمبلی، بیوروکریٹس اور دوسرے طاقتور افراد کیخلاف بھی کارروائی کی جائے،اگر ایسا نہ کیا گیا تو ملک میں جاری احتساب کے بیانیے کو نقصان پہنچے گا۔سنجوک کی طرف سے وزیر اعظم پاکستان عمران خان سے مطالبہ کیا گیا کہ وہ اپنے وعدوں کے مطابق ملک میں پروٹوکول کے خاتمے کیلئے بھی اقدامات کریں۔حکومتی وزراء اور اہم شخصیات ،بیوروکریسی ،شاہانہ پروٹوکول لے رہے ہیں جو پی ٹی آئی کے دعووں اور وعدوں کی نفی ہے۔جس کا اعتراف وزیر اعظم کے معاون خصوصی نعیم الحق بھی کر چکے ہیں ۔امید کی جاتی ہے کہ عمران خان عوامی امنگوں کے مطابق ملک میں بلا امتیاز احتساب،پروٹوکول کے خاتمے ،اور ملکی وسائل کو برابری کی سطح پر تقسیم کرنے کیلئے کردار ادا کرتے رہیں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں