196

اسلام آباد: حکومت کا منی لانڈرنگ روکنے کیلیے نگرانی کا نظام متعارف کرانے کا فیصلہ.

اسلام آباد (محمد طارق شاد سے) وفاقی حکومت نے فیٹف ایکشن پلان پر عملدرآمد کرتے ہوئے منی لانڈرنگ اور ٹیررازم فنانسنگ کی روک تھام کیلیے وکلا، چارٹرڈ اکاؤنٹنٹس، ریئل اسٹیٹ ڈیلرز اور قیمتی دھاتوں، پتھروں کے ڈیلرز سمیت دیگر تمام مجاز نان فنانشل بزنس اینڈ پروفیشنز (ڈی این ایف بی پی ایس) کی مانیٹرنگ و نگرانی کا نظام متعارف کروانے کا فیصلہ کیا ہے جس کیلئے وزارت داخلہ،وزارت قانون و انصاف، ایس ای سی پی، ایف بی آر، ایف آئی اے سمیت چاروں صوبوں کے نمائندوں پر مشتمل خصوصی ورکنگ گروپ قائم کیا جائے گا۔ ذرائع کے مطابق مذکورہ ورکنگ گروپ فیٹف کی سفارشات نمبر 22،23 اور28 کے تحت وکلا،چارٹرڈ اکاونٹنٹس،ریئل اسٹیٹ ڈیلرز اور قیمتی دھاتوں ،پتھروں کے ڈیلرز سمیت دیگر تمام رسک بیسڈ مجاز نان فنانشل بزنس اینڈ پروفیشنز(ڈی این ایف بی پی ایس)کی آمدنی و ان کی سرگرمیوں کی مانیٹرنگ و نگرانی سے متعلق دیگرسفارشات پر عملدرآمد کیلئے پالیسی تیار کرے گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں