187

پاکپتن: محنت کش کے گھر میں پراسرار بیماری نے پنجے گاڑ لیے، 4 بچے چلنے پھرنے سے معذور، حکومت سے مدد کی اپیل. والد محمد مختار.

پاکپتن (محمد امین سے) محنت کش کے گھر میں پر اسرار بیماری نے پنجے گاڑ لیے ایک ہی خاندان کے اکلوتے بیٹے سمیت4 بچے چلنے پھر سے معزور ہوگئے ورثاء علاج کیلئے حکومتی مدد کے منتظر تفصیلات کے مطابق نواحی گاوں چک بیدی میں پراسرار بیماری نے پنجے گاڑ لیے گاؤں کے رہائشی محمد مختار کے اکلوتے بیٹے 22 سالہ محمد آصف18 سالہ فرزانہ بی بی16 سالہ فوزیہ اور 14 سالہ الشبہ کو نشانہ بنا کر چلنے پھرنے کی صلاحیت سے محروم کر دیا، وقت گزرنے کے ساتھ ساتھ اب میرے بیٹے کے دماغ پر بھی اس بیماری کا اثر ہو رہا،والدین نے عمر بھر کی جمع پونجی بیماری کے علاج پر صرف کر دی جس کے باعث گھر میں نوبت فاقوں تک آ پہنچی۔ بچوں کے والد محمد مختار نے بتایا کہ بچے 15 سال کی عمر میں پہنچتے ہیں تو بیماری حملہ آور ہو جاتی ہے،علاج کیلئے پنجاب بھر کے دھکے کھائے ہیں مگر میرے بچے ٹھیک نہ ہو سکے،میری آمدن کا ذریعے پان سیگریٹ کی دکان کو بھی کسی نے جلا ڈالا۔اولاد کی حالت پر تڑپتے والدین نے حکومت سے بچوں کے علاج کی اپیل کی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں