196

پاکپتن: عوامی تشہیر کے زریعے سادہ عوام سے پیسے بٹورنے والی غیر قانونی کمپنیوں کے خاتمے کیلئے سخت اقدامات کریں گے. احمد کمال مان، ڈپٹی کمشنر.

پاکپتن(وقار فرید جگنو سے) ڈپٹی کمشنر احمد کمال مان نے کہا ہے کہ عوامی تشہیر کے زریعے سادہ عوام سے پیسے بٹورنے والی غیر قانونی کمپنیوں کے خاتمے کیلئے سخت اقدامات کریں، عوام کے جان ومال کے تحفظ کو ہر سطح پر یقینی بنایا جائے، عوام غیر قانونی اور غیر منظور شدہ رجسٹرڈ کمپنیوں کے نرغے میں نہ آئیں، ان خیالات کا اظہار انہوں نے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا جس میں متعلقہ اداروں کے افسران نے شرکت کی اجلاس کو بتایا گیا کہ حاجی احسان الحق سکنہ46/C گلی نمبر PS/A اوکاڑہ کا رہائشی ہے، اور اس کی بناؤ زندگی کے نام سے ایک کمپنی ممبر سازی کیلئے ایک مخصوص فیس کا مطالبہ کرتی ہے اور پہلے ممبران سے نئے ممبران لانے کیلئے اور اس کے عوض رقم بھی لانے کا کہتی ہے اس کمپنی کی ویب سائیٹ www.banaozindgi.com بنائی گئی ہے اسکے علاوہ اس کی تشہیر کیلئے پمفلٹس بھی چھپواتی ہے جس میں فیس بک جی میل فون نمبر سمیت دیگر معلومات درج ہوتی ہیں اس کمپنی کے ملازمین بالمشافہ بات چیت، فون کالز اور سوشل میڈیا کے زریعے بھولے بھالے لوگوں کو باتوں کے زریعے قائل کرنے کے بعد ممبر شپ کے زریعے آمادہ کرکے سبز باغ دکھاتے ہیں اور اس کے بعد انہیں بھاری نقد رقم اور نوکر ی کا جھانسہ دے کر رقم بٹورتے ہیں، یہ غیر قانونی کمپنی نہ تو رجسٹرڈ ہے اور نہ ہی متعلقہ اداروں سے اجازت لیکر بنائی گئی ہے، مزید بر آں سٹیٹ بنک آف پاکستان اور سیکورٹی و ایکسچینج کمیشن آف پاکستان نے مشترکہ طور پر اس طرح کی سر گرمیوں کو غیر قانونی قرار دے کر قومی اخبارا ت میں عوامی تنبیہ کے اشتہارات بھی چھپوائے گئے ہیں تاکہ عوام کو اس فراڈ اور دھوکہ دہی سے بچایا جا سکے.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں