245

سیدہ کوثر منور جی …… (طاہر ملک)

تحریر: طاہر ملک.

قارئین! آج میرا کالم ایشیاء کی اس باہمت اور ممتاز خاتون شخصیت پر ہے جنہوں نے دیار غیر میں بے پناہ کامیابیاں سمیٹیں اور اپنی صحافتی سماجی خدمات کا لوہا خود منوایا اور اپنی خدمات کے دوران لاتعداد کارکردگی اعزازات، میڈلز، شیلڈز،سرٹفیکیٹس اعلی شخصیات سے گراں قدر خدمات کے اعتراف میں وصول کئے وہ ایشیاء کی معروف خاتون ہیں سیدہ کوثر منور جی سیدہ کوثر منور پاکستان سے صوبہ پنجاب اور زندہ دلان شہر لاہور سے تعلق رکھتی ہیں انہوں نے1994میں لاہور جناح ڈگری کالج خواتین سے گریجویشن کی اور تعلیم کے ساتھ ساتھ کالم نگاری اور ادبی بیٹھک سے وابستہ ہو کر ملک حالات اور سماج کے متعلق لکھنا شروع کیا بعد میں فرینکفرٹ جرمنی مقیم ہو گئیں جہاں پر اعلی تعلیم یافتہ ہونے اور سماجی خدمات سے پہلے ہی وابستہ ہونے پر اپنی سماجی خدمات پیش کیں بعد میں جرمنی سے لندن آ گئیں یورپین ممالک میں دیگر ممالک سے نئی آنے والی خواتین کے مسائل اور قانون سے ناواقفیت کے ایشوز دیکھ کر دھنک فاؤ نڈیشن کے زریعے خواتین کی فلاح وبہبود ان کو بااختیار بنانے اور ان کی ہر ممکن مدد کے لئے سرگرم رہیں اور دھنک فاؤنڈیشن کے زریعے اب بھی خواتین کی فلاح وبہبود کے لئے سر گرم ہیں. آپ نے بائیس سال جرمنی میں جرمنی میڈیا تنظیم ہر بورنر سائیٹنگ میں نمایاں خدمات پیش کیں. آپ کو مانچسٹر اردو ٹائمز کے کاروان ادب سے حسن کارکردگی ایوارڈ، اوڈنری سروس یونین ناروے سے میڈیا بیسٹ ایوارڈ، یو کے سے ہیومن بیسٹ ایکٹیوسٹ ایوارڈ، اوورسیز پاکستانی فاؤنڈیشن یو کے سے سرٹیفکیٹ رول آف میڈیا، جرمن کلچرل سوسائٹی فرینکفرٹ سے اعلی کارکردگی سرٹفکیٹ فرام اولڈ ہم میٹرو پولیٹین مانچسٹر سے اعلی کارکردگی ایوارڈ اور لاتعداد انٹرنیشنل ممالک سے بے شمار سرٹفکیٹس اور ایوارڈ سے آپ کو نوازا گیا ہے. محترمہ کوثر منور کا عزم ہے کہ جب تک جسم میں جان ہے اپنی زندگی خدمت خلق اور لوگوں کی راہنمائی میں گزاروں اور اپنے ملک پاکستان کا نام یورپین ممالک میں روشن کروں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں