225

کراچی: ناظم آباد کا علاقہ منشیات فروشوں اور گٹکا سپلائی کرنے والوں کے رحم وکرم پر. پولیس اہلکار بھتہ وصولی میں مصروف.

کراچی (محمد یوسف سے) تھانہ ناظم آباد کا علاقہ منشیات فروشوں اور گٹکا سپلائی کرنے والوں کے رحم وکرم پر. پولیس اہلکار بھتہ وصولی میں مصروف. ایس ایس پی سینٹرل اور ایڈیشنل آئی جی کے احکامات ہوا میں اڑا دئیے ہائی کورٹ کے احکامات کو نظر انداز، عدالتی تقدس پامال. باوثوق ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ تھانہ ناظم آباد پاپوش روڈ پر کلو پان والا، پہلوان پان والا اور پان اور گٹکے کے کھوکھے پر گٹکا ماوا پولیس کی سرپرستی میں سپلائی کیا جاتا ہے جو کہ سرجانی ٹائون سے منگوایا جاتا ہے اور تمام جگہوں سے لاکھوں روپے ہفتہ کی بیٹ وصول کی جاتی ہے، پاپوش روڈ پر پھاٹک کے قریب جھگیوں میں ہیروئن اورچرس کے اڈے قائم ہیں جس سے ہفتہ بھتہ وصول کیا جاتا ہے اور سفید پوش اور عام عوام میں زہر بیچنے والوں کو کھلے عام چھوٹ دے دی گئی ہے، ناضم آباد ڈائمنڈ پمپ کے پیچھے گلیوں میں منشیات فروشوں کے مستقل ٹھکانے ہیں جہاں سے ہفتہ لاکھوں روپے وصول کیے جا رہے ہیں، علاوہ اذیں تھانے سے باہر نجی ٹارچر سیل قائم ہیں جہاں معصوم اور عام شہریوں کو پکڑ کر رکھا جاتا ہے جنہیں بعد اذاں بھاری رقم لے کر چھوڑ دیا جاتا ہے. پیسے وصول نہ ہونے کی صورت میں کسی بھی ایف آئی آر میں فٹ کر دیاجاتا ہے. ایس ایس پی عارف اسلم ماتحت افسران کی حوصلہ افزائی کے لئے کوئی کسر نہیں چھوڑتے اور بہت تھوڑے عرصے میں کراچی میں انتہائی قابل آفیسر کے طور پر سامنے آئے ہیں، ایس ایس پی عارف اسلم اور ایڈیشنل آئی جی کو چاہیے کہ کسی ایماندار مند افسر سے انکوائری کروا کر ذمہ دار عناصر کے خلاف تادیبی کاروائی عمل میں لائیں تاکہ ڈیپارٹمنٹ کا نام خراب ہونے سے بچ جائے.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں