186

ساہیوال: معاشرے سے رشوت اور بد عنوانی کے خاتمے کے بغیر پاکستان کی ترقی ممکن نہیں. شفقت اللہ مشتاق، ریجنل ڈائئریکٹر اینٹی کرپشن.

ساہیوال (خصوصی رپورٹ) ڈائریکٹر اینٹی کرپشن ساہیوال ریجن شفقت اللہ مشتاق نے کہا ہے کہ معاشرے سے رشوت اور بد عنوانی کے خاتمے کے بغیر پاکستان کی ترقی ممکن نہیں، ہمیں چاہیے کہ ان دو نا سوروں کے خاتمے میں آگے آئیں اور کرپٹ عناصر کی نشاندہی کر کے اپنا قومی فریضہ ادا کریں- مثبت صحافت اور غلطیوں کی نشاندہی وقت کی اہم ضرورت ہے جس کے لئے پرنٹ اور الیکٹرانک میڈیا کے نمائندوں پر بھاری معاشرتی ذمہ داری عائد ہوتی ہے- انہوں نے یہ بات اپنے دفتر میں الیکٹرانک میڈیا ایسوسی ایشن کے سر پرست رانا جاوید نثار اورصدر محمد نعیم شیخ کی قیادت میں ایک وفد سے ملاقات کے دوران کہی- سرکل آفیسر چوہدری محمد شریف بھی ملاقات میں موجود تھے- انہوں نے کہا کہ کرپشن کا خاتمہ اسی صورت ممکن ہے جب عوام کرپشن اور بد عنوانی کے خلاف اٹھ کھڑے ہوں اور ان کے سد باب کے لئے محکمہ اینٹی کرپشن کا ہاتھ بٹائیں- انہوں نے کہا کہ محکمہ اینٹی کرپشن اپنے روایتی طریقہ کار سے نکل کر پرو ایکٹو انداز سے کرپشن کے خلاف جاری جنگ میں ہر اول دستے کا کردار ادا کر رہا ہے او راب تک ساہیوال ڈویژن سے ناجائز قابضین سے اربوں روپے کی سرکاری اراضی واگزار کرائی جا چکی ہے- ہماری پوری کوشش ہے کہ سرکاری زمینوں کی بندر بانٹ روکی جائے اور اس گھناؤنے فعل میں ملوث عناصر کے خلاف سخت کارروائی کی جائے جس کے لئے ضروری ہے کہ میڈیا اور عوام ان قبضوں کی نشاندہی کریں اور اپنا قومی فریضہ بھی ادا کریں- شفقت اللہ مشتاق نے یقین دلایا کہ محکمہ اینٹی کرپشن رولز کی پیروی کرتے ہوئے کرپٹ عناصر کو کیفر کردار تک پہنچانے میں کوئی کسر اٹھا نہیں رکھے گا تا کہ معاشرے سے بد عنوانی کا خاتمہ ہو اور سرکاری وسائل چند کرپٹ عناصر کی جیبوں میں جانے کی بجائے عوام کی فلاح و بہبود پر خرچ ہوں- ایک سوال کے جواب میں انہوں نے یقین دلایا کہ زیر التواء انکوائریز پر کارروائی تیز کی جائے گی تا کہ سالوں سے زیر تفتیش مقدمات کا جلد فیصلہ ہو سکے-

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں