203

رتو ڈیرو: بلاول بھٹو کے حلقے میں ڈاکٹر نے ایک ہی سرنج استعمال کر کے 25 بچوں اور خواتین کومرض ایڈز میں مبتلا کر دیا.

رتو ڈیرو(محمد شبیر سے) چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری کے حلقہ ’’رتوڈیرو‘‘ میں نجی ہسپتال میں ڈاکٹر کے ایک ہی سرنج کے بار بار استعمال سے 20بچے اور5خواتین ایڈز جیسی موذی بیماری میں مبتلا ہو گئے۔تفصیلات کے مطابق رتوڈیرو میں ایڈز میں مبتلا ڈاکٹر مظفر ایک ہی سرنج سے بچوں اور خواتین کو انجکشن لگا کر خواتین بچوں سمیت25 افراد کو موت کے منہ تک لے گیا۔سند ھ ہیلتھ کیئر کمیشن نے تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ ملزم مظفر خود بھی ایڈزجیسی موذی مرض میں مبتلا ہے ،انہوں نے ایک ہی سرنج کا استعمال کرتا رہا جس سے دیگر بچوں اور خواتین میں ایڈز پھیلتا رہا، مذکورہ بچوں اور خواتین میں ایڈز کی تصدیق ہو گئی ہے ، متاثرہ بچوں کی عمریں ایک سے لیکر 9 سال تک کی ہے ،ہیلتھ کمیشن کے مطابق پولیس نے ملزم مظفر کے خلاف مقدمہ درج کرکے گرفتار کر لیا گیا ہے ۔دوسری جانب ملزم ڈاکٹر نے دوران تفتیش بتایا کہ مجھے ایڈز کی بیماری نہیں ہے اگر ایسا ہوتا تو کبھی بھی مریضوں کو علاج نہ کرتا ، انہوں نے مزید بتایا کہ پورا شہر میرے پاس علاج کرانے نہیں آتا ،چند ہی لوگ ہیں جو مجھ سے علاج کراتے ہیں۔رتو ڈیرو میں 250کے قریب لوگ ایڈز مرض میں مبتلا ہیں ،کیا ان سے سب کو میری وجہ سے ایڈز ہوا ہے ۔سندھ ہیلتھ کیئر کمیشن اپنی ناکامی چھپانے کیلئے تمام ملبہ میرے اوپر ڈال رہا ہے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں