228

ساہیوال: ضلعی انتظامیہ پلاسٹک شاپر بیگز کے نقصانات سے عوام کو آگاہ کرنے کے لئے خصوصی مہم شروع کر رہی ہے. محمد زمان وٹو. ڈپٹی کمشنر.

ساہیوال (خصوصی رپورٹ) ڈپٹی کمشنر محمد زما ن وٹو نے کہا ہے کہ ماحولیاتی آلودگی انسانی بقا کے لئے سب سے بڑاخطرہ ہے جس کا مقابلہ معاشرے کے تمام طبقات کو ملکر کرنا چاہیے، ضلعی انتظامیہ پلاسٹک شاپر بیگز کے نقصانات سے عوام کو آگاہ کرنے کے لئے خصوصی مہم شروع کر رہی ہے تا کہ ماحول کو صاف ستھرا رکھنے کے ساتھ ساتھ عوام کی صحت کا بھی تحفظ ممکن ہو سکے،وقت آ گیا ہے کہ صرف باتیں کرنے کی بجائے عملی اقدامات کئے جائیں اور عوام کو پلاسٹک شاپر بیگز کے نقصانات سے آگاہ کر کے ان کی خریدوفروخت پر پابندی لگا دی جائے -انہو ں نے یہ بات ضلع کونسل ہال میں پلاسٹک شاپر بیگز کے نقصانات سے متعلق آگہی سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کہی جو محکمہ ماحولیات، الیکٹرانک میڈیا ایسوسی ایشن اور ساہیوال چیمبر آف کامرس کے اشتراک سے منعقد ہوا – انہوں نے کہا کہ گلگت بلتستان کے ضلع ہنزہ کی انتظامیہ نے ان شاپر بیگز پر فوری پابندی عائد کر دی ہے اور ساہیوال میں بھی اس اقدام کے لئے اقدامات اٹھائیں جائیں گے-انہوں نے تمام سٹیک ہولڈرز خصوصا ساہیوال چیمبر،انجمن تاجران،میڈیا ایسوسی ایشنز اور سول سوسائٹی پر زور دیا کہ وہ ان شاپر بیگز کے تباہ کن نقصانات سے عوام کو آگاہ کریں -سیمینار میں ساہیوال آرٹس کونسل کے ڈائریکٹر سید ریاض ہمدانی،الیکٹرانک میڈیا ایسوسی ایشن کے صدر محمد نعیم شیخ،محکمہ ماحولیات کے ضلعی آفیسر علی اعجاز اور ساہیوال چیمبر کے صدر نے بھی شرکت کی -مقررین نے اپنے خطاب میں بتایا کہ ساہیوال میں روزانہ 196ٹن کوڑا اکٹھاہوتا ہے جس کا صرف 30فیصد حصہ بلدیہ اٹھاتا ہے جبکہ باقی کوڑا یا تو وہیں ختم ہو جاتا ہے یا ہوا کے ذریعے گھروں اور دوسری جگہوں پر منتقل ہو جاتا ہے جو انسانی صحت کے لئے سخت نقصان دہ ہے -انہوں نے بتایا کہ پلاسٹک شاپر بیگز 500سال تک ختم نہیں ہوتے اور ان کے ذریعے اشیاء صرف کی خریدوفروخت سے کینسر جیسے موذی مرض لاحق ہونے کے امکانات بڑھ جاتے ہیں -سیمینار کے آخر میں عوامی آگہی کے لئے واک کا انعقاد بھی کیا گیا –

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں