208

سرگودھا: ڈاکٹر نے میڈیسن کمپنی سے ادویات لکھنے کے عوض بھاری رشوت وصول کی، مقدمہ درج.

سرگودھا(خصوصی رپورٹ)ڈاکٹر نے میڈیسن کمپنی سے ادویات لکھنے کے عوض بھاری رشوت وصول کی، مقدمہ درج. تفصیلات کے مطابق ٹی ایچ کیو ھسپتال سلانوالی کے ایم ایس پر میڈیکل ریپ سے مبینہ طور پرکمپنی کی میڈیسن لکھنے کے عوض رشوت لی. ڈاکٹر نے سستی ادویات مھنگے داموں لکھنے کی ڈیل کی اور ادویات لکھنے کے لیے ایک لاکھ کیش لیا ایک اے سی اور پچاس ھزار کی ادوایات بھی بطور رشوت وصول کی. نجی میڈیسن کمپنی کی ادویات سرکاری ھسپتال میں بھی لکھنی تھیں. امجد نامی میڈیکل ریپ نے محکمہ اینٹی کرپشن کو اس ضمن میں درخواست دی تھی. جس پر ریجنل ڈاریکٹر اینٹی کرپشن عاصم رضاء نے تصور بوسال کو انکوائری افیسر مقرر کیا تو انکوائری میں ڈاکٹر پر رشوت لینا اور میڈسن لکھنا ثابت ھو گیا. محکمہ اینٹی کرپشن نے مقدمہ درج کرکے تفتیش کا دائرہ کاروسع کر دیا واضع رہے کہ پنجاب بھر میں کسی بھی ڈاکٹر پر رشوت لینے کا یہ پہلا مقدمہ درج ھوا ھے جب کہ یہ بات عام خیال کی جاتی ہے کہ ملک بھر میں ڈاکٹرز بڑی کمپنیوں سے کیش اور دیگر مراعات وصول کرتے ھیں بیرون ملک کے ویزے اور ھسپتالوں کا سامان بھی لیتے ھیں سرکاری ڈاکٹرز میں مقدمہ درج ھونے پر کھلبلی مچ گئی. دوسری طرف کرپٹ ڈاکٹر کے خلاف مقدمہ درج ھونے پر شہریوں نے محکمہ اینٹی کرپشن کو خراج تحسین پیش کیا ہے.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں