217

پڑپہ: گناہ کو چھپانے کے لئے نومولود بچے کو کھیتوں میں پھینک دیا گیا. کتے نوچتے رہے.

ہڑپہ (منیر احمد ساجد سے) گناہ کبیرہ کو چھپانے کے لئے نومولود پچے کو کھیتوں میں پھینک دیا گیا، کتے نوچتے رہے. تفصیلات کے مطابق ہڑپہ شہر میں نامعلوم جوڑے نے اپنے گناہ کو چھپانے کے لیے نومولود بچے کو کھیتوں میں پھینک دیا جہاں اسے کتے نوچتے رہے. راہگیروں نے بچے کی نوچی ہوئی نعش کو کتوں سے چھین کر گڑھا کھود کر کھیتوں میں ہی دفنا دی۔ عینی شاہدین کاکہنا ہے کہ بچے کی نعش سرخ رنگ کے کپڑے میں لپٹی ہوئی تھی جسے کتے چیڑ پھاڑ کررہے تھے۔ عوامی حلقون کا کہنا ہے کہ اپنے گناہ کو چھپانے کے لئے یہ فعل انسانیت کی تذلیل کی بد ترین مثال ہے. اور اپنی ہوس کو مٹانے کی خاطر انسانیت کی تذلیل ناقابل معافی جرم ہے اس گناہ کے کرداروں کو اپنے کیے کی سزا ملنی چاہئے۔ اس واقع پر مقامی لوگوں نے پولیس اور محکمہ صحت سے ذمہ داران کا تعین کرکے کاروائی کرنے کا مطالبہ کیاہے. گلی محلوں میں بنے میٹرنٹی ہوم اور گھروں میں کام کرنے والی دائیوں کے خلاف محکمہ صحت اور دیگر قانون نافذ کرنے والے اداروں کو کاروائی کرنی چاہئے. پولیس تھانہ ہڑپہ کو اطلاع دینے کے باوجود پولیس کا آنے سے انکار جرائم پیشہ افراد کو کھلی چھٹی دینے کے مترادف ہے.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں