231

پاکپتن: ہراسگی سے پاک ماحول ملازمت پیشہ خواتین کا حق ہے. عارف عمر عزیز صوبائی سیکرٹری محتسب پنجاب.

پاکپتن(بیورورپورٹ )ہراسگی سے پاک ماحول ملازمت پیشہ خواتین کا حق ہے دوران ملازمت پیشہ خواتین کیلئے خوف خطر کا ماحول پیدا کرنا قانونا جرم ہے صوبہ پنجاب میں جائے ملازمت پر خواتین کو ہراساں کرنے کے خلاف تحفظ کا ایکٹ2010 ترمیم شدہ 2012 نافذ العمل ہے تمام سرکاری نیم سرکاری رجسٹرڈ وغیر سرکاری ، نجی اداروں ہسپتالوں کالجز یونیورسٹیوں فیکٹریوں میں ملازمت پیشہ خواتین کے حقوق کا تحفظ قانونا لازم ہے جائے ملازمت پر خواتین کیساتھ غیر اخلاقی رویہ رکھنا زبر دستی تعلق رکھنے پر مجبور کرنا دفتری مراعات کو ذاتی تعلق سے منسوب کرناخواتین کو ہراساں کرنے کے زمرے میں آتا ہے تمام سرکاری نیم سرکاری رجسٹرڈ وغیر سرکاری ، نجی اداروں ہسپتالوں کالجز یونیورسٹیوں فیکٹریوں میں ملازمت پیشہ خواتین کو ہراساں کرنیوالوں کے خلاف ٹھوس شواہد کے تحت سخت قانونی کاروائی عمل میں لائی جائے گی ، کوئی بھی شخص ایسی حرکت کا مر تکب ہو تو ہمیں فوری اطلاع دی جائے کیونکہ ایسے لوگوں کو جرمانہ سالانہ ترقی کی ضبطی عہدے کی تنزلی اور ملازمت سے بر خاستگی کی سزا دے جا سکے گی ان خیالات کا اظہار صوبائی سیکر ٹری محتسب عارف عمر عزیز نے محتسب پنجاب کے زیر اہتمام ضلع کونسل ہال میں ہراسگی سے متعلق منعقدہ سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کیا ڈپٹی کمشنر احمد کمال مان ، چیر مین ضلع کونسل میاں محمد اسلم سکھیرا سمیت ایجو کیشن ہیلتھ این جی اوز وکلاء سمیت دیگر مختلف شعبوں سے تعلق رکھنے والی خواتین کی کثیر تعداد نے شرکت کی چیرمین ضلع کونسل میاں محمد اسلم سکھیرا نے کہا ہے کہ نبی کریم نے سب سے پہلے خواتین کے حقوق و تحفظ کا احترام کیا اسوقت کے سرداروں سے خواتین کو زندہ درگور کرنے سے منع فرمایا اورانکی عصمت کی حفاظت کرنے کی تلقین کی صوبائی سیکرٹری محتسب عارف عمر عزیز نے کہا کہ ہراسگی متعلق خواتین اپنے حقوق کے تحفظ کیلئے اپنے ادارے میں قائم کردہ ہراسگی انکوائری کمیٹی سے رابطہ کر سکتی ہیں خاتونِ محتسب پنجاب کو درخواستیں براہ راست ارسال کر سکتے ہیں خواتین اپنی شکایات ڈاک کے علاوہ خاتون محتسب پنجاب کی ویب سائٹ www.ombudsperson.punjab.gov.pkپر آن لائن بھیج سکتی ہیں.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں