266

لاہور: ابھینندن کے گرفتاری سے قبل بھی پاکستان میں داخل ہونے کا انکشاف.

لاہور (صابر بخاری سے)پاکستان کی طرف سے ڈاگ فائٹ کے بعد گرائے جانے والے بھارتی طیارے مگ 21 طیارے کے پائلٹ ابھینندن کے گرفتار ہونے سے قبل بھی ایک بار پاکستانی فضائی حدود میں داخل ہونے کا انکشاف ہوا ہے۔ ذرائع کے مطابق ابھینندن بھارت کا اہم ہوا باز تصور کیا جاتا ہے اور کسی بھی فضائی حملے میں اس کا کردار اہم رہا ہے۔ اس کی صلاحیتوں کی بدولت ہی ہوابازی سے متعلق ایک فلم میں اس سے استفادہ کیا گیا۔ جب بھارت نے 26فروری کو پاکستانی فضائی حدود کو عبور کرکے نام نہاد سرجیکل سٹرائیک کا پلان بنایا تو ابھینندن بھی اس منصوبے میں شامل تھا۔ پاکستان کی فضائی حدود کی خلاف ورزی کرنے اور اپنا پے لوڈ پھینک کر فرار ہونے والے طیاروں میں ابھینندن کا طیارہ بھی شامل تھا اور جب بھارتی طیارے واپس پہنچے تو ابھینندن مبینہ کامیابی پر جشن منانے والوں میں بھی سب سے آگے تھا۔ 28فروری کو پھر ابھینندن نے ٹارگٹ کو نشانہ بنانے کیلئے اڑان بھری۔ مگر بھارت کا سپر سٹار ہوا باز پاکستانی ہوابازوں کے مقابلے میں ریت کی دیوار ثابت ہوا اور چند ہی لمحوں میں ابھینندن کا غرور خاک میں مل گیا، پاک فضائیہ کے ہوا باز نے ایسا تابڑ توڑ حملہ کیا کہ بھارتی سپرسٹار چند لمحوں میں اوسان خطا کر بیٹھا اور تباہ ہوتے طیارے سے نیچے چھلانگ لگا دی اور پاک فوج کے ہاتھوں گرفتار ہوگیا۔ بھارت کو اب اس بات کے لالے پڑے ہوئے ہیں کہ ان کا سپر سٹارہواباز اگر چند لمحوں میں ٹھس ہوگیا تو دوسرے تیسرے درجے کے ہواباز وں کا کیا بھروسہ؟

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں