196

ساہیوال: اسلام نے عورت کے وقار کو بلند کیا جبکہ جدید تہذیب نے اسے شوپیس کے طورپر پیش کیا. میاں بابر صغیر.

ساہیوال(خصوصی رپورٹ) صدرراہ حق ویلفیئرفاؤنڈیشن میاں بابرصغیرنے خواتین کے عالمی دن کے موقع پر نکالی گئی ریلیوں میں بے حیائی کو فروغ دینے اورشعائر اسلام کا مذاق اڑانے کی مذمت کی اورکہا کہ مسلمان خواتین کا آئیڈیل اوررول ماڈل خاتون جنت حضرت بی بی فاطمتہ الزہرہ رضی اللہ عنہااورحضرت عائشہ صدیقہ رضی اللہ عنہاجیسی ہستیاں ہونی چاہئیں۔ اپنے دفترمیں انفارمیشن سیکرٹری پریس کلب ملک دلاورسلطان ڈھکو سے ملاقات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ عورت کو سب سے زیادہ حقوق اسلام نے دیئے ہیں اسلام ہی خواتین کی عزت، حرمت اورحقوق کاسب سے بڑا علمبردارہے اسلام نے عورت کو ماں، بہن ،بیٹی ،بیوی کا درجہ دیا ہے اسلام نے ماں کے روپ میں عورت کا درجہ اس طور پر بلند کیا کہ ماں کے قدموں تلے جنت قرار دے دی، اسلام نے عورت کے وقار کو بلند کیا جبکہ جدید تہذیب نے اسے شوپیس کے طورپر پیش کیا اوراسے اشتہارات کی زینت بنایا آج یورپ خواتین کے حقوق کا علمبردار بنا ہوا ہے حقیقت میں اس نے عورت کو معاشرے میں اس مقام دلوانے کی بجائے اسے گھٹیا انداز میں پیش کیا خواتین کے عالمی دن کے موقع پر شعائر اسلام کا مذاق اڑایا گیا اورنکاح جیسی سنت کیخلاف پروپگنڈہ کیا گیا ۔انہوں نے کہا کہ جن خواتین کو اسلام پسند نہیں ہے وہ مغرب میں چلی جائیں، اسلام اورپیغمبر اسلام حضرت محمد نے خواتین کے حقوق اوران سے حسن سلوک کے حوالے سے جو تعلیمات انسانیت کو دی ہیں دنیا کا کوئی مذہب اورکوئی قانون اس کی برابری نہیں کر سکتا. مغرب نے عورت کو گھروں سے نکال کر عام شاہراہوں پر نمائش کے لئے لاکھڑ اکیا اسلام نے اس کے برعکس اسے عزت وعظمت عطاء کی۔ بیرونی فنڈنگ اوراین جی اوزکے زیر اہتمام خواتین کا آزادی مارچ اصل میں فحاشی کو فروغ دینے کے لئے اوراسلام کو بدنام کرنے کی سازش ہے آج یورپ نے ہماری خاندانی نظام کو برباد کر دیا عورتوں کو جنسی آوارگی کا کھلونا بنا دیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں