222

ساہیوال: غیر ملکی کمپنی ٹائنز کی آڑمیں اغواء برائے تاوا ن کادھندہ، ڈائریکٹر سمیت 4 ملزمان کے خلاف مقدمہ درج.

ساہیوال(خصوصی رپورٹ)غیر ملکی کمپنی ٹائنز کی آڑمیں اغواء برائے تاوا ن کادھندہ،کمپنی ڈائریکٹرسمیت چارملزموں کیخلاف ایک اورمقدمہ درج،ملزمان عرصہ درازسے سادہ لوح بے روزگارنوجوانوں کونوکری کاجھانسہ دیکراغواء اوربھاری تاوان وصول کررہے تھے۔بتایاگیاہے کہ ملزم عادل علی ڈائریکٹرٹائنز نے ساتھیوں کے ہمراہ ساہیوال میں الشفاء انٹرنیشنل ہسپتال کے نام سے ایک جعلی ادارہ بنایاہواہے جہاں یہ جعلساز جعلی ادویات‘لیٹرپیڈومہریں استعمال کرتے اورسادہ لوح بے روزگارافرادکو ٹیلی فونک اوراشتہارات کے ذریعے نوکری کاجھانسہ دیکر بلاتے اورانہیں ڈرادھمکاکر رقم بٹورتے ہیں۔گزشتہ روزاغواء برائے تاوان گروہ کے سرغنہ عادل علی نے فیصل علی کومختلف قسم کے سبزباغ دکھاکر نوکری کاجھانسہ دیکر دفتربلایااوردفترکے ایک کمرہ میں زنجیروں سے جکڑکرحبس بیجامیں رکھ کراغواء کرلیا۔اغواء کاروں نے رہاکرنے کیلئے فیصل سے اس کے گھرفون کروایااور70ہزار روپے بطورتاوان بھتہ وصول کرکے اسے رہاکردیا۔فیصل نے بتایاکہ عادل علی کی سربراہی میں ٹائنز کمپنی کے نام سے ایک فراڈکرنیوالاگروہ ساہیوال میں سرگرم عمل ہے جوغریب گھرانے کے بچوں کو ورغلاپھسلاکر نوکری کے بہانے بلاتے ہیں اورپھران کے والدین سے بھتہ وصول کرکے ان کے بچوں کو رہائی دیتے ہیں۔پولیس نے مختلف دفعات کے تحت اغواء کارعادل علی وغیرہ چارملزموں کیخلاف مقدمہ درج کرلیاہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں