309

کاروباری اور ﺩﻧﯿﺎﻭﯼ ﮐﺎﻣﯿﺎﺑﯽ ﮐﮯ ﺭﮨﻨﻤﺎ ﺍﺻﻮﻝ

تحریر: حافظ احمد ھاشمی

1۔ ﺑﮍﯼ ﺗﻨﺨﻮﺍﮦ ﻭﺍﻟﯽ ﺟﺎﺏ ﺳﮯ ﺯﯾﺎﺩﮦ ﭼﮭﻮﭨﮯﮐﺎﺭﻭﺑﺎﺭ ﮐﻮ ﺗﺮجیح ﺩﯾﮟ . ﮐﯿﻮﻧﮑﮧ ﺟﺎﺏ ﺁپ کو ﮐﺒﮭﯽ ﺩﻭﻟﺘﻤﻨﺪ ﻧﮩﯿﮟ ﺑﻨﺎ ﺳﮑﺘﯽ۔

2 ۔ ﺁﭖ ﺭﻭﺯﺍﻧﮧ 10 ﮐﺎﺭﻭﺑﺎﺭﯼ ﺁﺋﯿﮉﯾﺎﺯ ﺳﻮﭼﯿﮟ . ﯾﮧ 10 ﺁﺋﯿﮉﯾﺎﺯ ﺁﭘﮑﻮ ﺳﺎﻻﻧﮧ 3600 ﻧﯿﻮﺑﺰﻧﺲ ﮐﮯ ﻣﻮﺍﻗﻌﮯ ﻓﺮﺍﮨﻢ ﮐﺮﯾﻨﮕﮯ ﺟﻦ ﻣﯿﮟ ﺳﮯﭼﻨﺪ ﺁﺋﯿﮉﯾﺎﺯ ﺁﭖ ﮐﯿﻠﺌﮯ ﺧﻮﺷﺤﺎﻟﯽ ﮐﺎ ﺳﺒﺐ ﺿﺮﻭﺭ ﺛﺎﺑﺖ ﮨﻮﻧﮕﮯ۔

3 ۔ ﺁﭖ ﺯﻧﺪﮔﯽ ﻣﯿں بہت زیادہ ﺑﭽﺖ ﻧﮧ ﮐﺮﯾﮟ ‘ ﭘﯿﺴﮯ ﺑﭽﺎﻧﮯ ﮐﯿﻠﺌﮯ بس ﮐﺎﺳﻔﺮ ﻧﮧ ﮐﺮﯾﮟ۔ ﮐﯿﻮﻧﮑﮧ ﺩﻧﯿﺎ ﻣﯿﮟ ﺁﺝ ﺗﮏ ﮐﻮﺋﯽ ﺷﺨﺺ ایسی ﺑﭽﺖ ﺳﮯ ﺍﻣﯿﺮﻧﮩﯿﮟ ﮨﻮﺍ ‘ ﺍﻣﯿﺮﯼ ﺯﯾﺎﺩﮦ ﺁﻣﺪﻥ ﮐﮯ ﺫﺭﺍﺋﻊ ﺳﮯ ﺁﺗﯽ ﮨﮯ۔
سب سے زیادہ انسویسٹمنٹ اپنی صحت پہ کریں۔
4 ۔ ﺁﭖ ﺗﻌﻠﯿﻢ ﺣﺎﺻﻞ ﮐﺮﯾﮟ۔ ﺗﻌﻠﯿﻢ ﺳﮯ ﺍﻧﺴﺎﻥ ﮐﮯ ﺳﻮﭼﻨﮯ ﺳﻤﺠﮭﻨﮯ ﮐﯽ ﺻﻼﺣﯿﺖ ﻣﯿﮟ ﺍﺿﺎﻓﮧ ﮨﻮﺗﺎ ﮨﮯ ﺍﻭﺭ ﮐﺎﺭﻭﺑﺎﺭﯼ ﺍﮨﻠﯿﺖ ﺑﮍﮬﺘﯽ ﮨﮯ۔ ﺳﻮﺟﮫ ﺑﻮﺟﮫ ﺭﮐﮭﻨﮯ ﻭﺍﻟﮯ ﻟﻮﮒ ﮐﺒﮭﯽ ﺗﻨﮕﺪﺳﺖ ﻧﮩﯿﮟ ﺭﮨﺘﮯ۔

5 ۔ ﺁﭖ ﮐﺒﮭﯽ ﺍﯾﺴﺎ ﮐﺎﺭﻭﺑﺎﺭ شروع ﻧﮧ ﮐﺮﯾﮟ ﺟﺲ ﻣﯿﮟ بہت ﺯﯾﺎﺩﮦ ﻣﻘﺎﺑﻠﮧ ﮨﻮ ‘
ﺑﻠﮑﮧ ﺍﯾﺴﺎ ﮐﺎﺭﻭﺑﺎﺭ ﮐﺮﯾﮟ ﺟﺲ ﻣﯿﮟ ﺁﭖ ﺍﭘﻨﯽ ﺍﺟﺎﺭﮦ ﺩﺍﺭﯼ ﻗﺎﺋﻢ ﮐﺮ ﺳﮑﯿﮟ۔
6۔ ﺁﭖ ﮨﻤﯿﺸﮧ ﺍﻥ ﻟﻮﮔﻮﮞ ﮐﻮ ﻭﻗﺖ ﺩﯾﮟ ﺟﻮ ﺁﭖ ﺳﮯ ﻣﺤﺒﺖ ﮐﺮﺗﮯ ﮨﯿﮟ ﻧﮧ ﮐﮧ ﺍﻥ ﻟﻮﮔﻮﮞ ﮐﻮ ﺟﻦ ﮐﯿﻠﺌﮯ ﺁﭖ ﺑﮯﻭﻗﻌﺖ ﮨﯿﮟ ﯾﺎ ﺟﻨﮩﯿﮟ ﺁﭘﮑﮯ ﮨﻮﻧﮯ ﯾﺎ ﻧﮧ ﮨﻮﻧﮯ ﺳﮯ ﮐﻮﺋﯽ ﻓﺮﻕ ﻧﮩﯿﮟ ﭘﮍﺗﺎ۔

7۔ ﺁﭖ ﺳﺎﺭﺍ ﺩﻥ ﺍﻥ ﻧﻌﻤﺘﻮﮞ ﭘﺮ ﺷﮑﺮ ﺍﺩﺍ ﮐﺮﯾﮟ ﺍﻟﻠﮧ ﺗﻌﺎﻟﯽٰ ﻧﮯ ﺟﻮ ﺁﭖ ﮐﻮ ﻋﻨﺎﯾﺖ ﮐﺮ ﺭﮐﮭﯽ ﮨﯿﮟ ‘ ﺷﮑﺮ ﺍﻧﺴﺎﻥ ﮐﯽ ﺗﻮﺍﻧﺎﺋﯽ ﻣﯿﮟ ﺍﺿﺎﻓﮧ ﮐﺮﺗﺎ ﮨﮯ۔

8 ۔ ﺁﭖ ﺧﻮﺩ ﭘﺮ , ﺍﭘﻨﯽ ذہنی ﺻﻼﺣﯿﺘﻮﮞ ﭘﺮ ﺍﻭﺭ ﺍﭘﻨﮯ ﺗﺠﺮﺑﮯ ﭘﺮ ﺍعتماد ﮐﺮﯾﮟ ‘ ﺁﭖ ﺻﺤﯿﺢ ﺍﻭﺭ ﻏﻠﻂ ﮐﮯ ﺑﺎﺭﮮ ﻣﯿﮟ ﺩﻭﺳﺮﻭﮞ ﺳﮯ ﭘﻮﭼﮭﻨﮯ کی ﺑﺠﺎﺋﮯ ﺣﺎﻻﺕ ﭘﺮﺧﻮﺩ ﻏﻮﺭ ﮐﺮﯾﮟ ,
ﮐﯿﻮﻧﮑﮧ ﺩﻧﯿﺎ ﻣﯿﮟ ﺁﭘﮑﺎ ﺁﭖ ﺳﮯ ﺑﮍﺍ ﮐﻮﺋﯽ ﺩﻭﺳﺖ ﻧﮩﯿﮟ ‘ ﺁﭖ ﺧﻮﺩ ﮐﻮ زیادہ عرصے تک ﺩﮬﻮﮐﺎ ﻧﮩﯿﮟ ﺩﮮ ﺳﮑﺘﮯ.

9- تعلیم یافتہ ہوکر نوکری کی تلاش میں دربدر گھومنا بدقسمتی کی نشانی ہے.

10۔ ہزاروں کاروبار ہیں۔ اگر ایک کاروبار بھی کریں گے تو نوکری سے زیادہ کمائیں گے. اب تو آپ ان پڑھ بھی نہیں کہ سوچیں کاروبار کیسے کیا جائے. اب آپ پڑھے لکھے ہیں اور یقینا ایک بہتر کاروبار کر سکتے ہیں.

11۔ یقین مانیں نوکری آپ کو کچھ نہیں دیتی بس آپ کو زندہ رکھتی ہے۔ آپ کتنا بھی کام کر لیں آپ وہیں کے وہیں رہیں گے.
بس ٹھان لینے کی دیر ہوتی ہے کہ میں نے جو بھی کرنا ہے کر کے دکھانا ہے. بس ہم نے اس بات کا ڈر نکال دینا ہے کہ ہم کاروبار نہیں کر سکتے.

آپ سروے کر لیجیئے. جس نے کاروبار کا مزہ چکھا وہ کبھی بھی نوکری کی طلب نہیں کریگا. البتہ نوکری والوں کو سوچتے دیکھا ہوگا کہ یار کوئی سائیڈ کاروبار کروں، گزارہ نہیں ہو رہا.

12۔ جو کام آپ خود نہیں جانتے، نہ کریں۔ دوسروں سے یہ توقع چھوڑ دیں کہ وہ آپ کے سرمایے سے آپکو کما کے دیں گے الا ما شاء اللہ۔

13۔ آپ اپنی وراثت میں نوکری نہیں چھوڑ سکتے، جبکہ کاروبار نسلوں میں چلتا ہے۔

14۔ ایماندار تاجر کا رتبہ دنیا اور آخرت میں بلند ہے جبکہ بےایمانی دونوں جہانوں میں باعثِ ہلاکت ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں