604

اسلام آباد: نیا پاکستان بچت اور سادگی کے نعرے ہوا میں اڑ گئے، حکومتی اخراجات کم ہونے کے بجائے بڑھ گئے.

کراچی(فیاض چشتی سے) پی ٹی آئی حکومت کے اخراجات میں کمی اور سادگی کے دعوے کے باوجود بجٹ خسارہ گزشتہ سال سے 29 فیصد بڑھ گیا۔ ترقیاتی اخراجات میں کمی جب کہ غیر ترقیاتی اخراجات میں 17 فیصد اضافہ اور آمدنی پہلے سے بھی کم ہو گئی۔ وزارت خزانہ کے مطابق رواں مالی سال پہلے چھ ماہ کا بجٹ خسارہ 10 کھرب 30 ارب روپے کی ریکارڈ سطح تک پہنچ گیا، جو گزشتہ مالی سال اس عرصے سے 234 ارب روپے زیادہ ہے۔ رواں مالی سال پہلی ششماہی کا بجٹ خسارہ جی ڈی پی کے 2.7 فیصد کے برابر رہا، گزشتہ سال کا بجٹ خسارہ جی ڈی پی کا 2.2 فیصد تھا، جولائی سے دسمبر تک حکومت کی مجموعی آمدنی 23 کھرب 27 ارب 11 کروڑ روپے رہی جو گزشتہ سال سے 2.4 فیصد کم ہی جب کہ مجموعی اخراجات 33 کھرب 57 ارب روپے سے بھی متجاوز ہیں جو گزشتہ سال سے 5.5 فیصد زیادہ ہیں۔ رپورٹ کے مطابق رواں مالی سال کی پہلی ششماہی میں قرضوں کی واپسی پر 876 ارب 70 کروڑ روپے خرچ ہوئے جوکہ گذشتہ سال اسی عرصے سے 16.7 فیصد زیادہ ہے، دفاعی اخراجات کا حجم پہلے سے تقریبا 22 فیصد اضافے کے ساتھ 479 ارب 59 کروڑ روپے رہا. جب کہ ترقیاتی اخراجات میں 36 فیصد کمی رہی، چھ ماہ میں ترقیاتی منصوبوں پر 369 ارب روپے خرچ کیے گئے جب کہ مجموعی طور پر غیر ترقیاتی اخراجات کا حجم 17.3 فیصد اضافے سے 29 کھرب 84 ارب روپے سے تجاوز کر گیا.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں