309

ساہیوال: گورنمنٹ ہائر اسکینڈری اسکول 120/9L کمیر، اساتذہ وسٹاف کا سیاہ پٹیاں باندھ کر سکول پرنسپل کے خلاف احتجاجی مظاہرہ.

ساہیوال(خصوصی رپورٹ) اساتذہ وسٹاف کا سیاہ پٹیاں باندھ کر سکول پرنسپل کے خلاف احتجاجی مظاہرہ ،پر نسپل نے سٹاف کے خلاف پو لیس کو درخواست دیدی، اہل دیہہ و ٹیچرز کا وزیر اعلیٰ پنجاب وڈپٹی کمشنر ساہیوال سے کارروائی کا مطالبہ۔تفصیلات کے مطابق میونسپل کمیٹی کمیر میں گورنمنٹ ہائیر سیکنڈری سکول 120/9-Lکے ساتذہ وسٹاف نے مشترکہ طور پرچند روز قبل سکول پرنسپل محمد ابراہیم کے رویہ کے خلاف ایک درخواست متعلقہ اداروں کو ارسال کی تھیں جس پر عملدارآمد نہ ہونے پر سکول کے ٹیچرز و سٹاف نے سیاہ پٹیاں باندھ کر سکول پر نسپل کے خلاف شدید احتجاج کیا ۔مظاہرین نے بینرز اورو کتبے اٹھا رکھے تھے جن پر”بداخلاق انچارج پرنسپل نامنظور”اساتذہ کو گالی دینا بند کرو”اساتذہ کی تذلیل ناقابل قبول”اساتذہ پر ذہنی تشددبند کرو”گوابراہیم گو”ودیگر نعرے درج تھے ۔بتا یا گیا ہے کہ احتجاج شروع ہو نے پر سکول پرنسپل نے پو لیس کمیر کو اطلاع کر کے موقع پر بلا لیا جنہوں نے کوریج کے لئے آئے ہو ئے صحافیوں کو مبینہ طور پر تشدد کا نشانہ بنا یا۔ بعد ازاں پر نسپل نے سکول کے ٹیچرز ،سٹاف اور کوریج کے لئے گئے ہو ئے صحافیوں کے خلاف ہی درخواست دے دی ، ٹیچرز و سٹاف کا کہنا ہے کہ پرنسپل با اثر ہے اور ڈی او سیکنڈری فوزیہ اعجاز پر نسپل کی سپورٹر ہے اور ہمیں پہلے ہی پتہ تھا کہ ہمیں اپنے حق میں آواز بلند کر نا مہنگا پڑ ے گا۔پو لیس کمیر کی غنڈہ گردی کا ڈی پی او ساہیوال کو فوری نوٹس لینا چاہیے۔ اہل دیہہ نے ڈپٹی کمشنر ،کمشنر اوروزیر اعلیٰ پنجاب سے مطالبہ کیا کہ سکول کی ساری صورتحال کو خود جائزہ لیا جا ئے اور جلد از جلد اس مسئلہ کو حل کیا جا ئے ۔بچوں کی پڑھائی رکی ہو ئی ہے اگر سکول کی ایسی حالت رہے گی تو بچے سکول میں کیا سیکھیں گے بچوں کے ذہنوں پر برا اثر پڑ رہاہے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں