352

دیپالپور: اوکاڑہ تا دیپالپور قاتل روڈ کو فی الفور دو ریہ کیا جائے. عوامی وصحافتی حلقوں کامطالبہ.

دیپالپور (ملک سیف اللہ نوناری سے) دیپالپور روڈ پر ٹریفک زیادہ ہونے اور تیز رفتاری کی وجہ سے حادثات روز کا معمول بن گئے ۔اس روڈ پر سب سے زیادہ تیز رفتار پاکپتن ٹائم، بصیرپور ٹائم کوسڑ ہیں ان کی وجہ سے حادثات زیادہ ہوتے ہیں. اس روڈ پر ٹریفک کنٹرول کرنے کا کوئی نظام موجود نہیں ہے جس کے باعث آئے دن جانی نقصان ہوتا رہتاہے۔ گذشتہ روز بھی پیر دی ہٹی پر 2 موٹرسائیکلوں میں تصادم کے نتیجہ میں متعدد افراد کے زخمی ہونے کی اطلاع موصول ہوئی ہے۔ اس روڈ کو ون وے بنانے کے لیے ہمیشہ دیپالپور کی صحافی برادری نے آواز اٹھائی لیکن تاحال شنوائی نہ ہوسکی. قاتل روڈ کے نام سے موسوم اس روڈ کو دورویہ کرنے تک چین صحافی چین سے نہیں بیٹھیں گے۔ اعلی حکام سے اپیل ہے کہ اس روڈ کو جلد سے جلد ون وے بنایا جائے۔ واضع رہے کہ اس سنگل سڑک پر پاکپتن شریف۔ حویلی لکھا۔ بصیرپور۔ حجرہ شاہ مقیم۔ دیپالپوراور اوکاڑہ سے دیپالپور کے ساتھ ساتھ تمام دیہہ 51 ٹو ایل ۔چکنمبر 40 ڈی۔ پیر دی ہٹی۔ چورستہ. 38 ڈی. سوبھارام۔ پراچہ بستی کے باسی اسی سڑک پر سفر کرتے ہیں جوکہ متعدد جگہوں سے ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں