322

پی ایم اے پاکپتن کا ہنگامی اجلاس، ڈاکٹرز پولیس گردی کے خلاف سراپا احتجاج.

پاکپتن(محمد علی رحمانی سے) آج ہم تمام ڈاکٹر پولیس گردی کے خلاف سراپا احتجاج ہیں۔ان خیالات کا اظہار ضلعی صدر پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن ڈاکٹر محمد معراج خان نے نسیم ہسپتال میں ہنگامی اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا انہوں نے بتایا کہ پولیس اہلکار اے ایس آئی قاسم نے نجی اسپتال کے عملہ کو شدید نتائج کی دھمکیاں دینے کے بعد اپنے سگے بھائی کے ہمراہ غنڈہ گرد عناصر کو بھیج کر اسپتال کے سامنے جو دہشت گردی کی ہے اور اسپتال سٹاف ادریس پر جو انسانیت سوز تشدد کیا ہے اس پولیس گردی نے سانحہ ساہیوال کی یاد تازہ کردی ہے۔ انہون نے بتایا کہ پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن اس واقعہ کی شدید مذمت کرتی ہے اور 24 گھنٹے کا الٹی میٹم دیتی ہے کہ اے ایس آئی قاسم کو فی الفور سسپینڈ کیا جائے ، اس کے بھائی حیدر اور اس کے غنڈہ گرد حواریوں کے خلاف اقدام قتل اور دہشتگردی کی دفعات کے تحت مقدمہ درج کیا جائے۔ اگر 24 گھنٹے میں اے ایس آئی قاسم کو برخاست کرکے اس کے بھائی اور دہشتگردی کرنے والے غنڈوں کے خلاف مقدمہ درج کرکے گرفتار نہ کیا گیا تو پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن بھر پور احتجاج کرے گی کسی اسپتال میں مریضوں کو چیک نہیں کیا جائے گا مطالبات تسلیم نہ ہونے کی صورت میں احتجاج کا دائرہ پنجاب کی سطح پر پھیلادیا جائے گا.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں