259

پاکپتن: آلو کی فصل کے مناسب ریٹ نہ ملنے پر کسان اتحاد کی احتجاجی ریلی، 4 مارچ کو پنجاب اسمبلی کے باہر دھرنے کی کال دے دی.

پاکپتن(سکندر زمان سے) آلو کی فصل کے امدادی ریٹ مقرر نہ ہونے پر کسان اتحاد کی احتجاجی ریلی،کسان اتحاد نے چار مارچ کو پنجاب اسمبلی کے سامنے احتجاجی دھرنے کی کال دے دی۔ کسانوں کا کہنا تھا کہ پنجاب حکومت وزیر اعظم کے اعلان کی راہ میں رکاؤٹ بن گئی ہے تفصیلات کے مطابق پاکستان کسان اتحاد نے آلو کی فصل کے امدادی ریٹ مقرر نہ ہونے پر ڈی سی آفس کے باہر احتجاجی ریلی نکالی۔ کسانوں نے آلو کی فصل کو نظر آتش کر کے حکومت کے خلاف شدید نعرے بازی کی۔ ریلی کے دوران پاکستان کسان اتحاد نے 4 مارچ کو پنجاب اسمبلی کے باہر احتجاجی دھرنے کی کال دے دی۔ ریلی کی قیادت پاکستان کسان اتحاد کے صوبائی صدر چوہدری رضوان اقبال، ضلعی صدر چوہدری صابر نیازکمبوہ، ضلعی سیکرٹری اطلاعات چوہدری محمد اشرف، ضلعی راہنما کسان اتحاد اختر خاں بلوچ نے کی ریلی سے خطاب کے دوران پاکستان کسان اتحاد کے پنجاب صدر چوہدری رضوان اقبال نے کہا کہ وزیر اعظم نے کسانوں کو ریلیف دینے کا اعلان کیا تھا مگر پنجاب حکومت وزیر اعظم کے فیصلے کی راہ میں رکاؤٹیں حائل کر رہی ہے، چار مارچ کو پنجاب اسمبلی کے باہر آلو کے ٹرک نظر آتش کیے جائیں گے۔ کسان اتحاد ساہیوال کے صدر کیپٹن ٹی کے کا کہنا تھا کہ آلو کی فصل کے کسانوں کو لاگت سے کم ریٹ مل رہے ہیں، پنجاب بھر سے کسان چار مارچ کے دھرنے میں پہنچ کر حکومت کے خلاف احتجاج کریں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں