360

پاکپتن: تمام متعلقہ اداروں کے افسران اپنے اپنے دائرہ کار میں کسانوں ، کاشتکاروں کے مسائل ترجیح بنیادوں پر حل کریں. احمد کمال مان ڈپٹی کمشنر.

پاکپتن( حیدر علی شہزاد سے ) شعبہ زراعت ملکی معشیت میں ریڑھ کی ہڈی کی حثیت رکھتا ہے ، حکومتی پالیسوں کے مطابق کسانوں ، کاشتکاروں کو ہر ممکن ریلیف دینے کیلئے اقدامات کیے جائیں ، تمام متعلقہ اداروں کے افسران اپنے اپنے دائرہ کار میں کسانوں ، کاشتکاروں کے مسائل ترجیح بنیادوں پر حل کریں ، فصلوں کی کاشت کیلئے کسانوں کو جدید تحقیق کے زریعے مقررکردہ نرخوں کے مطابق بیج مہیا کیے جائیں اور اس مقصد کے حصول کیلئے جعلی اور ملاوٹ شدہ زرعی ادویات کا خاتمہ کیا جائے اور اس سلسلہ میں متعلقہ اداروں کے افسران اپنا فعال کردار ادا کریں ، ان خیالات کا اظہار ڈپٹی کمشنر احمد کمال مان نے ضلعی زرعی مشاورتی کمیٹی کے بلائے گئے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا ، اجلاس میں اے سی پاکپتن علی عاطف ، اے سی عارفوالا افتخار حسین ، اے سی کوا رڈ ارشد وٹو ، ڈی ڈی زراعت توسیع ریاض احمد ، ڈی آئی او سید سلمان حسین ، ڈی ایف سی قسور مبارک بٹ ، اے ڈی زراعت ، ڈی او واٹر مینجمنٹ سمیت دیگر متعلقہ اداروں کے افسران بھی موجود تھے ، اجلاس کو بتایا گیا کہ 80 سیمپلنگ کا اہداف مقرر کیا گیا ہے ، ضلع بھر میں مہنگے داموں زرعی ادویات فروخت کرنے والے فرٹیلائزر کے خلاف گزشتہ سال 759500 روپے جرمانہ کیا گیا ہے ، ملاوٹ شدہ اور جعلی زرعی ادویات کے کاتمے کیلئے سیمپلنگ بھی کی جا رہی ہے اور تشخیص کیلئے سیمپلنگ کے نمونے بھی لیبارٹری میں بجھو ائے جا رہے ہیں ، فیڈرل سیڈ کارپوریشن کی جانب سے سیڈ ایکٹ انفور سمنٹ کے تحت بغیر سرٹفیکیٹ بیج فروخت کرنے والوں کے خلاف گزشتہ سال 26 چالان کیے گئے ہیں جبکہ اس سلسلہ میں ضلع بھر کے 210سیڈ ڈیلرکو ٹرینگ بھی دی گئی ہے ، ڈی ڈی او لائیو سٹاک محمد اشفاق نے بتایا کہ گز شتہ سال جانوروں کی ویکسینشن کرنے کا ٹارگٹ بھی حا صل کیا گیاہے اور پولٹری کے 300 یونٹس بھی تقسیم کیے گئے ہیں ، ڈپٹی کمشنر احمد کمال مان نے لائیو سٹاک کے حکام کو ہد ایات جاری کیں کہ ملکہ ہانس میں سلاٹر ہاوس بنانے کیلئے سکیم بنائی جائے تاکہ لوکل سطح پر عوام کو سہولیات دستیاب ہو ،سلاٹر ہاوس کی سکیم جلد تیار کرکے دیں تاکہ اس پر کام کا آغاز کیا جا سکے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں