415

پاکپتن: مرحوم ایک استاد،راہنما، شفیق بھائی، ملنسار اور خدمت خلق کے جذبہ سے سرشار انسان تھے. جاوید اقبال بابر.

پاکپتن (حیدر علی شہزاد سے) مرحوم ایک استاد،راہنما، شفیق بھائی، ملنسار اور خدمت خلق کے جذبہ سے سرشار انسان تھے ان خیالات کا اظہار CEOایجوکیشن جاوید اقبال بابر نے تعزیتی ریفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ تعزیتی ریفرنس ان کے بڑے بھائی طارق پرویز کوخراج تحسین پیش کرنے اور ایصال ثواب کے لیے الفہد میرج ہال میں مقامی تنظیموں انجمن فلاح مریضاں وڈسٹرکٹ اینٹی ٹی بی ایسوسی ایشن،پریس کلب،پرائیویٹ سکولز ایسوسی ایشن، ہیڈماسٹرایسوسی ایشن، ہیڈمسٹریس ایسوسی ایشن، پنجاب ٹیچر یونین اورپاکستان تحریک انصاف خواتین ونگ کی طرف سے منعقد کیا گیا۔ اس موقع پر ایم پی اے نعیم ابراہیم، ڈپٹی ڈائریکٹر سوشل ویلفیئرافضل بشیر مرزا،ضلعی صدر PTIریاض ارشد خان نیازی ایڈووکیٹ، ضلعی صدر PTIخواتین ونگ رخسانہ منظور بھٹی، سٹی صدر PTIملک محمد اشرف، جنرل سیکرٹری ڈسٹرکٹ اینٹی ٹی بی ایسوسی ایشن حکیم لطف اللہ، ممتاز مذہبی سکالر صدر اتحاد بین المسلمین مفتی محمد زاہد اسدی،صدر پریس کلب وقار فرید جگنو،جنرل سیکرٹری انجمن فلاح مریضاں ڈاکٹر شاہد مرتضیٰ چشتی،جنرل سیکرٹری ہیڈ مسٹریس ایسوسی ایشن فرزانہ مجید، صدرپرائیویٹ سکولز ایسوسی ایشن چوہدری حیدر علی،صدر پنجاب ٹیچرز یونین آصف علی بھنڈارہ، صدر ہیڈ ماسٹرز ایسوسی ایشن جمشید کمبوہ اور پرنسپل گورنمنٹ اسکول سپیشل ایجوکیشن ڈاکٹر عبدالکریم نے خطاب کیا۔ مقررین نے کہا کہ مرحوم ایک استاد تھے اور استاد کومسلم معاشرے میں مرکزی مقام حاصل ہے، حضرت علامہ اقبالؒ فرمایا کرتے تھے کہ استاد دراصل قوم کے محافظ ہیں ۔طارق پرویز کی رحلت سے ہم ایک معمار سے محروم ہوگئے ہیں ان کا خلا صدیوں پر نہیں ہوسکے گا۔ تعزیتی ریفرنس کے اختتام پران کے ایصال ثواب کے لیے فاتحہ خوانی اورمغرت و بلند ی درجات کے لیے خصوصی دعا ئیں کی گئی۔تعزیتی ریفرنس میں پیر محمد سعیداحمد چشتی،عثمان غنی وٹو،لطیف شہزاد،شعبان رضا،مجید خان بلوچ ، عمر حیات بلوچ، سکندر نیاز چشتی، افتخار بھٹی سمیت اساتذہ اور معززین شہر کی بری تعداد نے شرکت کی اور سماجی تنظیموں کی طرف سے ایسے پروگرامز کے انعقاد کو اچھا قدم قرار دیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں