389

پاکپتن: تمباکو نوشی اور دیگر سماجی برائیاں بظاہر معمولی بات لگتی ہے لیکن یہ ہمارے معاشرہ کو ناسور بن کا چاٹ رہی ہیں.افضل بشیر مرزا.ڈپٹی ڈائریکٹر سوشل ویلفلیئر.

پاکپتن(حیدر علی شہزاد سے) تمباکو نوشی اور دیگر سماجی برائیاں بظاہر معمولی بات لگتی ہے لیکن یہ ہمارے معاشرہ کو ناسور بن کا چاٹ رہی ہیں ان کے خاتمہ کے لیے ہمیں دو قدم آگے بڑھ کر جذبہ جہاد کے تحت کام کرنا ہوگا ان خیالات کا اظہار افضل بشیر مرزا ڈپٹی ڈائریکٹر سوشل ویلفیئر نے گذشتہ روز ایمز کیمپس ورچوئل یونیورسٹی پاکپتن میں انجمن فلاح مریضاں اور ڈسٹرکٹ اینٹی ٹی بی ایسوسی ایشن کے زیر اہتمام نشہ کی لعنت اور بچوں پر جنسی تشدد کے موضوع پر منعقدہ سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ اس موقع پر ڈائریکٹر کیمپس محمد عدنان نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہماری نوجوان نسل پہلے سے زیادہ تعلیم یافتہ اور باشعور ہے پھر بھی ان خرابیوں کا پھلنا پھولنا باعث تشویش ہے۔ سید شبیر الحسن شاہ میڈیکل سوشل آفیسر DHQہسپتال پاکپتن نے اس موقع پر کہا ہمیں معاشرہ میں موجود ان خرابیوں کو دبانے کے بجائے ان کو سامنے لاکر ان کے خاتمہ کی جدوجہد کرنی ہوگی۔ والدین کا اپنے بچوں کے ساتھ تعلق جتنا گہرا ہوگا یہ برائیاں اتنی ہی کم ہوں گی۔ حکیم لطف اللہ سیکرٹری جنرل PSAوجنرل سیکرٹری ڈسٹرکٹ اینٹی ٹی بی ایسوسی ایشن نے اس موقع پر کہا کہ صرف تمباکونوشی سے تیرہ سے سترہ قسم کے کینسر پیدا ہورہے ہیں اور دنیا میں اموات کی تین بڑی وجوہات کے پیچھے تمباکونوشی ہی ہے۔ ڈاکٹر شاہد مرتضیٰ چشتی جنرل سیکرٹری انجمن فلاح مریضاں نے اپنے خطاب میں کہا کہ ساٹھ سے سے ستر لاکھ اموات سالانہ صرف تمباکونوشی سے ہورہی ہیں اتنی قیمتی چیز جو ہمارے پاس اللہ کی امانت ہے یعنی ہماری جان کیا ہم اسے اتنی آسانی سے کیسے جانے دے رہے ہیں۔ وقار فرید جگنو صدر پریس کلب نے اپنے خطاب میں کہا کہ ہمیں خود ان برائیوں سے دور رہنا ہے اور اس ذہر کو پھیلانے والے عناصر کی نشاندہی کرنا ہوگی اور ان کے قلع قمع کے لیے پریس، سماجی تنظیمات ، تعلیمی اداروں اور سماج کو مل کر کام کرنا ہوگا۔ اس موقع پر حیدر علی شہزادانفارمیشن سیکرٹری پریس کلب وحکیم ندیم احمد نے بھی خطاب کیا،سیمینار میں یونیورسٹی کے طلباء وطالبات نے شرکت کی اور بھر پور دلچسپی کا مظاہرہ کرتے ہوئے اس بات کا عہد کیا کہ ہم اس ضمن میں اپنا بھر پور کردار ضرور ادا کریں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں