286

ساہیوال: اراضی کے ریکاڈر کی کمپیوٹرائزیشن سے عوام کو فراڈ اور دھوکہ دہی سے نجات ملی ہے. عارف انور بلوچ، کمشنر

ساہیوال(خصوصی رپورٹ)کمشنر ساہیوال ڈویژن عارف انو ر بلوچ نے کہا ہے کہ اراضی سنٹرز پر عوام کی مشکلات کو کم کرنے اور انہیں سروسز کی فوری فراہمی کے لئے مانیٹرنگ کا نظام سخت کر دیا ہے ،کوشش ہے کہ عوام کی شکایات کا فوری نوٹس لے کر اسے حل کیا جائے ،عملہ عوام کے ساتھ اپنے رویے کو بہتر کرے اور سنٹر میں عوام کی رہنمائی کے لئے بورڈز لگائیں جائیں ۔انہوں نے یہ بات اراضی ریکارڈ سنٹر کے دورے کے دوران عملے سے کہی ۔ڈائریکٹر جنرل لینڈ ریکارڈ اتھارٹی راؤ محمد وسیم بھی ان کے ہمراہ تھے ۔انہوں نے کہا کہ اراضی کے ریکاڈر کی کمپیوٹرائزیشن سے عوام کو فراڈ اور دھوکہ دہی سے نجات ملی ہے اور ان کے مالکانہ حقوق کا تحفظ یقینی بنایا گیا ہے تاہم ابھی سنٹرز پر در پیش مشکلات کو کم کرنے کے لئے مزید اقدامات کی ضرورت ہے ۔انہوں نے کہا کہ سنٹرز پر ٹاؤٹ سسٹم کو برداشت نہیں کیا جائے گا اور ساہیوال سنٹرپر سابقہ عملے کے خلاف کارروائی اسی ٹاؤٹ سسٹم کی بیخ کنی کے لئے کی گئی ۔لینڈ ریکارڈ اتھارٹی کے ڈی جی راؤ محمد وسیم نے بتایا کہ سنٹرز پر سٹاف کی کمی کو دور کرنے کے لئے اقدامات اٹھائے جا رہے ہیں اور پبلک سروس کمیشن سے 120افسران کی سلیکشن ہو چکی ہے جسے مختلف سنٹرز میں تعینات کیا جا رہا ہے ۔انہوں نے کہا کہ سنٹرز پر 40فیصد رش صرف فرد لینے کے لئے ہے جس کے لئے ایکسپریس کاؤنٹرز بھی قائم کئے جا رہے ہیں ۔کمشنر نے ڈویژن کے تمام اسسٹنٹ کمشنرز کو ہدایت کی کہ وہ ان سنٹرز کا مسلسل دورہ کریں اور عوام کو در پیش مشکلات کو موقع پر ہی دور کرنے میں سنٹر کے عملے کی رہنمائی کریں ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں