250

پاکپتن. سگریٹ نوشی اور نشہ کی روک تھام کے لیے طلباء اور اساتذہ میں شعور بیدار کرنے کی اشد ضرورت ہے. عثمان غنی وٹو

پاکپتن (وقار فرید جگنو سے) سگریٹ نوشی اور نشہ کی روک تھام کے لیے طلباء اور اساتذہ میں شعور بیدار کرنے کی اشد ضرورت ہے ان خیالات کا اظہارعثمان غنی وٹو پرنسپل گورنمنٹ ایم سی ہائی اسکول پاکپتن نے نشہ کی روک تھام کے حوالہ سے انجمن فلاح مریضاں و ڈسٹرکٹ اینٹی ٹی بی ایسوسی ایشن کے زیر اہتمام منعقدہ سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ طارق انجم چوہدری ڈپٹی ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسرطارق انجم چوہدری نے کہا کہ تعلیمی اداروں پبلک مقامات پر سگریٹ نوشی بالکل ختم ہونی چاہیے اس سلسلہ میں طلباء ، اساتذہ، انتظامیہ، عوام اور سماجی تنظیموں کو اس شعور کو پیدا کرنیکی کاوشیں کرنا ہوں گی۔


حکیم لطف اللہ جنرل سیکرٹری ڈسٹرکٹ اینٹی ٹی بی ایسوسی ایشن اپنے خطاب میں کہاکہ نشہ دین اسلام میں حرام ہے کیونکہ یہ انسانیت کی تباہی کاسبب ہے انہوں نے کہا کہ تمباکو نوشی تمام نشوں کی ماں ہے اس لیے ہمیں نشہ کہ لت کو روکنے کے لیے اس کے فروغ پر قابو پانا ہوگاجنرل سیکرٹری انجمن فلاح مریضاں ڈاکٹر شاہد مرتضی چشتی نے کہا کہ دنیا میں ہر 6سیکنڈ بعد ایک موت کا سبب تمباکو نوشی ہے اورسالانہ 60لاکھ اموات تمباکونوشی سے ہورہی ہیں جن میں سے صرف سیکنڈ ہینڈ تمباکو نوشی کے سبب ہونے والی ہلاکتوں کی تعداد 6لاکھ سے زائد ہے۔ صدر پریس کلب وقار فرید جگنو نے کہا کہنشہ کا عادی فرد قابل نفرت نہیں بلکہ قابل رحم ہے ۔جب کہ نشہ کا کاروبار کرنے والے ناسوروں کو کیفر کردار تک پہنچانے میں سب کو اپنا کردار ادا کرنا ہوگا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں