251

ساہیوال: غریب مریضوں کے لیے مختص زکوٰۃ فنڈز کیوں استعمال نہیں کیے؟ متعلقہ سوشل ویلفیئر آفیسر کی نکوائری کی جائے. شوکت علی لالیکاوزیر زکوٰۃ و عشر.

ساہیوال (خصوصی رپورٹ )صوبائی وزیر زکوۃ و عشر شوکت علی لالیکا نے کہا ہے کہ صوبائی حکومت غریب عوام کو صحت کی بنیادی سہولیات کی فراہمی کے لئے صحت کارڈ جاری کر رہی ہے جس سے دور درراز علاقوں کے عوام کو براہ راست فائدہ پہنچے گا ۔ہسپتالوں میں مریضوں کو طبی سہولیات کی فراہمی کے لئے ادویات کے ساتھ ساتھ ڈاکٹروں اور پیرا میڈیکل سٹاف کی حاضری پر بھی توجہ دی جا رہی ہے جس سے سروس ڈیلوری بہتر ہوئی ہے ۔انہوں نے یہ بات ڈی ایچ کیو ٹیچنگ ہسپتال کے دورے کے دوران بات چیت کرتے ہوئے کہی ۔ڈپٹی کمشنر محمد زمان وٹو اور میڈیکل سپرنٹنڈنٹ ڈاکٹر شاہد نذیر بھی ان کے ہمراہ تھے۔انہو ں نے ہسپتال میں غریب مریضوں کے علاج معالجے کے لئے مختص زکوۃ فنڈ استعمال نہ کرنے پر سخت ناراضگی کا اظہار کیا اور متعلقہ سوشل ویلفیئر آفیسر کے خلاف انکوائری کی ہدایت کی۔انہو ں نے ہسپتال کے دورے کے دوران ایمرجنسی ،گائنی اور میڈیکل وارڈز میں زیر علاج مریضوں سے علاج کی سہولیات کے بارے میں دریافت کیا اور ایم ایس کو ہدایت کی کہ کسی مریض کو دوائی کے بغیر ڈسچارج نہ کیا جائے۔انہوں نے ایمرجنسی میں پاکپتن سے آئے ایک مریض کے لواحقین کی شکایت پر اسے فوری بیڈ فراہم کرنے کی بھی ہدایت کی ۔ایم ایس ڈاکٹر شاہد نذیر نے بتایا کہ ٹیچنگ ہسپتال کا درجہ ملنے کے بعد مریضوں کے رش میں کئی گنا اضافہ ہو چکا ہے جسے محدود وسائل میں پورا کرنے کی بھر پور کوشش کی جاتی ہے ۔صوبائی وزیر شوکت علی لالیکا نے ڈاکٹروں اور پیرا میڈیکل سٹاف کی حاضری کے لئے بائیو میٹرک سسٹم کو فعال کرنے کی ہدایت کی اور کہا کہ وارڈز میں ڈاکٹروں کی موجودگی مریضوں کے بر وقت علاج کے لئے انتہائی ضروری ہے جس میں کوتاہی برداشت نہ کی جائے ۔ایم ایس ڈاکٹر شاہد نذیر نے بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ ہسپتا ل میں استعمال ہونے والی ادویات مختلف کمپنیوں سے قانون کے مطابق خریدی جا رہی ہیں جس سے ادویات کی کمی کی شکایات بہت کم ہوئی ہیں اورباقی کمی کو لوکل پرچیز کے ذریعے پورا کر لیا جاتا ہے ۔صوبائی وزیر نے محکمہ زکوۃ کی طرف سے ہسپتال کو دی جانے والی 1کروڑ روپے میں سے 60لاکھ خرچ نہ کرنے پر سوشل ویلفیئر آفیسر عبدالرحمن کے خلاف مکمل انکوائری کرنے کا حکم دیا اور کہا کہ غریب عوام کو صحت کی سہولیات فراہم نہ کرنے والے افسران کو کسی صورت معاف نہیں کیا جائے گا ۔ بعد ازاں صوبائی وزیر نے محکمہ زکوۃکے دفتر کا دورہ بھی کیا جس میں انہیں ساہیوال ڈویژن کے تینوں اضلاع کے زکوۃ بجٹ کے بارے میں تفصیلی بریفنگ دی گئی۔اس موقع پر ایڈمنسٹریٹر زکوۃ پنجاب محمد اسلم رامے ،ڈپٹی ایڈمنسٹریٹر ساہیوال ڈویژن وسیم ایوب ،ڈسٹرکٹ زکوۃ آفیسر ساہیوال و اوکاڑہ غلام فرید اور ڈسٹرکٹ زکوۃ آفیسر پاکپتن تنویر احمد بھی موجود تھے ۔انہوں نے تمام ضلعی زکوۃ افسران کو ہدایات کی کہ زکوۃ فنڈ کو شفاف طریقے سے مستحقین تک پہنچایا جائے اورمستحقین کی نشاندہی کے لئے تصدیق کا عمل شفافیت سے مکمل کیا جائے۔انہو ں نے مزید کہا کہ ڈسٹرکٹ زکوۃ آفیسرز کی ذمہ داری ہے کہ وہ ایجوکیشن اور صحت کو دیئے جانے والے فنڈز کا مکمل آڈٹ بھی کریں تا کہ زکوۃ فنڈ غریب عوام کی تعلیم اور صحت پر صحیح معنوں میں خرچ ہونے کو یقینی بنایا جا سکے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں